لاہور میں وکلاگردی پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں دھاوا، توڑ پھوڑ  حالات قابو سے باہر

لاہور میں وکلاگردی پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں دھاوا، توڑ پھوڑ حالات قابو سے باہر

2 views

 لاہورآج میدان جنگ میں تبدیل وکلا گردی نے ہر حد پار کردی مشتعل وکلا  نے پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی پر دھاوا بول دیا، ہسپتال کی ایمرجنسی  میں توڑپھوڑ مریض اور لواحقین بےبس حالات قابو سے باہر

تفصیلات کے مطابق لاہور میں وکلاء اور ڈاکٹرز کے درمیان جاری تنازع کی شدت  سنگین ہوگئی ہے

ہاتھوں میں ڈنڈے اور سوٹے تھامے وکلا کی بڑی تعداد آج پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے آئی سی یو اور آپریشن تھیٹر میں داخل ہوگئی اور توڑ پھوڑ کی

مشتعل وکلا کے حملے کے بعد ہسپتال کا  عملہ اور ڈاکٹرز بڑی مشکل سے جان بچا کر باہر نکلنے میں کامیاب ہوئےمشتعل وکلا نے

پی آئی سی میں کھڑی گاڑیوں کو بھی نقصان پہنچایا

۔جب کہ اسپتال کے باہر کھڑے پولیس اہلکاروں نے بھی وکلا کو توڑ پھوڑ سے نہ روکا۔

اسپتال ذرائع کے مطابق وکلا کے حملے کے باعث طبی امداد نہ ملنے پی آئی سی میں ایک خاتون جاں بحق ہوگئیں

خاتون کی شناخت گلشن بی بی کے نام سے ہوئی ہے۔

 ڈاکٹر بھی میدان میں کود پڑے اور وکلا پر پتھراو شروع کر دیا جس سے پنجاب کارڈیالوجی میدان جنگ بن گیا۔
دونوں جانب سے اینٹوں اور پتھروں کا استعمال کیا گیا
 پولیس نے مداخلت کی اور آنسو گیس کی شیلنگ شروع کر دی جس سے 4 افراد زخمی ہو گئے۔

پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے آس پاس موجود مارکیٹ کو بند کروا دیا گیا ہے اور رینجرز کی نفری بھی جائے وقوعہ پر پہنچ گئی ہے۔

واقعے کی اطلاع ملنے کے بعد وزیر اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان  پہنچے تو مشتعل وکلاء نے انہیں بھی نہ بخشا

انہیں بھی  تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔ اس کے علاوہ وکلاء کی جانب سے میڈیا نمائندوں اور ڈاکٹرز پر بھی تشدد کیا گیا۔

دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں وکلاء کی ہنگامہ آرائی کے واقعہ کا سخت نوٹس لے لیا ہے

اور واقعہ کی رپورٹ طلب کرتے ہوئے تحقیقات کا حکم دیا ہے

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *