ڈبلیو ایچ او کا کرونا وائرس کے خلاف کیے جانے والے تحقیقی کام میں تیزی لانے کا مطالبہ

ڈبلیو ایچ او کا کرونا وائرس کے خلاف کیے جانے والے تحقیقی کام میں تیزی لانے کا مطالبہ

6 views

عالمی ادارہ صحت کے سربراہ نے  چائنا سے پھیلنے والے کرونا وائرس کو دنیا کے لیے انتہائی خطرناک قرار دیتے ہوئے وائرس کے خلاف کیے جانے والے تحقیقی کام میں تیزی لانے کا مطالبہ کردیا۔

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے ڈائریکٹر جنرل ٹیڈروس اذانوم گریبسس نے دو روزہ اجلاس کے

دوران کہا ہے کہ اس اجلاس کا مقصد کورونا وائرس کی تشخیص اور ویکسین کی تحقیق

کے کام میں تیزی لانا ہے تاکہ دنیا کو اس بیماری کے اثر سے بچایا جاسکے۔

ٹیڈروس کے مطابق اب تک پوری دنیا میں کورونا وائرس سے لگ بھگ 42،708 واقعات روپوٹ درج ہوئے ہیں ۔

جبکہ 1،017 اموات بھی واقع ہوئی ہیں۔ ٹیڈروس نے 400 سے زیادہ محقیقن اور

دیگر افراد کے سامنے اس بات کا اعتراف بھی کیا کہ اس وقت کورونا وائرس سے چائنا کی آبادی زیادہ متاثر ہوئی ہے ۔

مگر مجموعی طور پر اس وائرس سے پوری دنیا کے متاثر ہونے کا خطرہ ہے۔

انہوں نے اجلاس کے شرکاء سے ایک روڈ میپ بنانے کی درخواست کی اور

اس مرض کو شکست دینے کے لیے فنڈ ریزنگ کی طرف بھی اشارہ کیا

نیز پوری دنیا کو متحد ہونے کا مشورہ بھی دیا۔

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *