کینسر کا شکار نادیہ جمیل نے سر کے بال کٹوالیے

کینسر کا شکار نادیہ جمیل نے سر کے بال کٹوالیے

20 views

نادیہ جمیل نے اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ کے ذریعے ایک ویڈیو شئیر کی ہے  جس میں وہ کینسر کی وجہ سے سر کے بال کٹواتی نظر آرہی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کینسر کا شکار ہونے والی پاکستان کی مشہور اداکارہ نادیہ جمیل نے سر کے بال کٹوا لیے ہیں۔

نادیہ جمیل نے اس لمحے کی ویڈیو اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ کے ذریعے شئیر کی ہے۔

 

 

View this post on Instagram

 

A huge thank you to the team at #Addenbrooks #hematology who didn’t just clean my pic line, feed me toffee pudding and give me my chemo, they also knew how to use a razor so helped tidy the patchy mess on my head The #NHS #mentalhealthcrises team have also been fantastic. They saved my life at a time I was in a really dark place. They simply didn’t give up on me. They are such #CHAMPIONS DR Luke Davies, Dr Farouhi, Sharon Saunders, Charlotte, Matt, Raquel, Marta, Dave, Yuki… Talking to them is simply a joy…they are so loving and healing. Then there have been those from home and away. Video calls every single day … Long intense loving messages. Thank you. It’s not been easy but you make it easier. Most of the time my phone is closed so the messages have been going to Mas phone. She reads them out to me and makes my day! Sometimes I come here and read the strength you all give me. Thank you! #igetbywithalittlehelpfrommyfriends

A post shared by Nadia Jamil (@njlahori) on

نادیہ جمیل نے گزشتہ ماہ اپنے ایک انٹرویو میں بتایا تھا کہ اُنہیں بریسٹ کینسر کا مرض لاحق ہوگیا ہے جو تیسرے درجے کا ٹیومر ہے۔

کچھ عرصے بعد انہوں نے چھوٹا آپریشن کرایا جس کے بعد باقاعدہ طور پر کیموتھراپی کا عمل شروع ہوا ۔

دورانِ علاج ان کے سر کے بال جھڑنے لگے تو انہوں نے اپنے سر کے سارے بال کٹوالیے۔

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *