کرونا کے خلاف پاکستان کی کوششیں، این سی او سی کی تفصیلات جاری

کرونا کے خلاف پاکستان کی کوششیں، این سی او سی کی تفصیلات جاری

26 views

انسانی جانیں نگلنے والے عالمگیر وباء کے خلاف جنگ میں پاکستان نے اب تک کیا کیا اقدامات کیے ہیں، نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر نے تفصیلات جاری کردی ہیں۔

این سی او سی کے مطابق پاکستان نے بروقت اور درست اقدامات کی وجہ سے نہ صرف بہترین طبی اقدامات کئے بلکہ

ساتھ ساتھ معیشت کی بحالی، روز گار،نوجوانوں اور انڈسٹری کے لئے ایک مربوط حکمتِ عملی کے تحت منصوبہ بندی بھی کی ہے۔

حکومتِ پاکستان نے تمام ریسورسز کو چینلائز کیا ہے اور لاک ڈاؤن کے باوجود اُن کی دستیابی کو یقینی بنایا ہے۔

ٹیسٹنگ

۔ٹیسٹنگ صلاحیت 472 سے بڑھ کر یومیہ ساٹھ ہزارسے زیادہ کی۔

لیبز

لیبارٹریز کی تعداد 2 سے 132 ہوگئی۔

وینٹی لیٹرز

-پاکستان اب ان چند ممالک میں شامل ہے جو اپنے ہی وینٹیلیٹر تیار کررہے ہیں۔

اس وقت ملک میں کرونا کے لئے 1525 وینٹیلیٹرز مختص ہیں

آکسیجن بیڈز

ملک بھر میں 1227 نئے آکسجن بستر شامل کیے گئے ہیں۔آزاد جموں و کشمیر میں 80 آکسیجن بستروں کو شامل کیا گیا ہے۔

بلوچستان میں فاطمہ جناح اسپتال میں 100 بستروں کو شامل کیا گیا ہے۔جبکہ گلگت بلستان میں  ہیلتھ کیئر سسٹم میں اضافی 100 آکسیجن

بستروں کو شامل کیا گیا ہے۔ خیبرپختونخوا میں 320 آکسیجن بستروں کو شامل کیا گیا ہے ،پنجاب میں 330 آکسیجن بستروں کو شامل کیا گیا ہے۔

سندھ میں عباسی شہید اسپتال میں 70 آکسیجن بستروں کو شامل کیا گیا ہے، اسلام آباد میں 227 آکسیجن بستروں کو شامل کیا گیا ہے ۔

حفاظتی سامان اور ٹیٹسنگ کٹس

مصنوعی ذہانت سے سینے کے ایکسرے، نسٹ یونیورسٹی میں ٹسٹنگ کٹس، ڈیفنس سائنس و ٹیکنالوجی آرگنائزیشن

سٹریٹیجک پلان ڈویژن کے تحت انفرادی حفاظتی سامان کی تیار ی کا آغاز ہوا۔

حفاظتی ہدایات

وزارت صحت نے کوویڈ-19 مختلف شعبوں کے لیے 31 ایس او پیز جاری کئیے۔

ڈاکٹرز ٹریننگ

 وی کیئر پروگرام کے تحت ڈاکٹرز، نرسز،پیرامیڈکس کو یہ احساس دلایا گیا کہ فرنٹ لائن سولجر کے طور پر ان کی حفاظت کے لئے

انہیں ہر ممکن سہولیات مہیا کی جائیں گی۔ 20 ہزار فرنٹ لائن ہیلتھ وکرز کوٹریننگ دی گئی تاکہ وہ اپنا کردار بخوبی ادا کر سکیں۔

احساس پروگرام

حکومت نے لاک ڈاون کے دوران محنت کشوں سمیت 1 کروڑ 25 لاکھ سے زائد لوگوں کو بھوک اور تنگدستی سے تحفظ

کیلئے احساس ہنگامی کیش پروگرام شروع کیاجس کے تحت اب تک 151.9 ارب روپے سے زائد کی رقم تقسیم کی گئی ہے۔

بجلی کے بلوں پر 1200ارب روپے ریلیف دیا گیا۔

اورسییز پاکستانی

پینسٹھ ممالک میں محصور ایک لاکھ سے زائدپاکستانیوں کو پی آئی اے اور غیر ملکی 478 پروازوں سے وطن واپس لایا گیا۔

ڈیجیٹل نیٹ ورکنگ

پندرہ سو سے زائد ہسپتالوں کو پہلی مرتبہ ریسورس مینجمنٹ سسٹم منسلک کیا گیا، پاکستان پاک نگہبان ایپ کے تحت ہسپتال کے متعلق درست

 معلومات کا حصول کو بھی یقینی بنایا گیا۔

رورل سپورٹ پروگرام

رورل سپورٹ پروگرام کے تحت کرونا سے لڑائی میں 66 اضلاع میں معاشرے کو متحرک کرنے کے ساتھ ہسپتالوں کی مدد، ڈیٹا کولیکشن اور

اہم مقامات کی ڈس انفیکشن اروایس اوپیز کی نگرانی بھی کی گئی۔

صنعت

وزارت صنعت وپیداور مزدور احساس پروگرام کے تحت 60 لاکھ لوگوں کو 12 ہزار روپے فی کس دئیے گئے۔

چھوٹا صنعت کار چھوٹا کاروبار کے تحت صارفین کی تین ماہ کی بلوں کی واپڈا کو پیشگی ادائیگی کی گئی۔

اکسیجن سلنڈر / ٹینکوں کی درآمد پر 3 ماہ تک ایکسائز اور کسٹم ڈیوٹی کا استثنیٰ دیا گیا۔

پروجیکشنز

بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کے عالمی اقتصادی جائزے کے مطابق 30 ممالک کے گروپ میں سے پاکستان واحد ملک جو

ممکنہ ڈاﺅن ٹرن کو منفی 0.4 سے 1.1 پر واپس لے آیا ہے، جبکہ پاکستان کی برآمدات جولائی 2019 سے مئی 2020 کے

دوران خطے کے دیگر ممالک سے بہت بہتر رہیں۔

طبی ماہرین، یارانِ وطن اور وہ پاکستانی جو وبا سے نمٹنے کے لئے دنیا بھر میں موجود ہیں۔ ان ماہرین کی مہارت سے فائدہ بھی اُٹھایا گیا۔

خیال رہے کہ پاکستان میں اب تک دو لاکھ 37 ہزار سے زیادہ افراد میں اس مرض کی تصدیق ہوئی ہے جبکہ 4922 ہلاکتیں ہوئی ہیں۔

یہاں اب تک ایک لاکھ 40 ہزار سے زیادہ افراد اس مرض سے صحتیاب بھی ہو چکے ہیں۔

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *