آن لائن قربانی سروس : لوگ گوشت کے حصول کیلئے رل گئے

آن لائن قربانی سروس : لوگ گوشت کے حصول کیلئے رل گئے

42 views

کورونا وائرس کے حفاظتی اقدامات کو مدنظر رکھتے ہوئے ملک میں بیشر لوگوں نے اجتماعی قربانی میں حصہ ڈالا جبکہ وہیں متعدد لوگوں نے آئن لائن آرڈربک کروائے۔

غانیہ نورین

پاکستان میں رواں سال میں عیدالاضحیٰ میں عالمی وباء کورونا وائرس اور حکومتی احکامات کے پیش نظر لوگوں نے انٹرنیٹ پر آن لائن بکنگ کا سہارا لیا۔

لوگوں کی بڑی تعداد نے مختلف کمپنیوں کا سہرا لیتے ہوئے جانوروں کی بکنگ تو کروادی مگر قربانی کے گوشت کے حصول کیلئے کافی پریشان نظر آئیں۔

کسی کو گوشت ملا ، کسی کو سڑا گوشت ملا تو کسی کو تاخیر سے ملا جبکہ بعض لوگوں کو گوشت ملا ہی نہیں۔

وہیں آن لائن قربانی نے صارفین کو شنج و پنج میں بھی مبتلا کردیا کہ قربانی ہوئی بھی یا نہیں، آن لائن قربانی نے جہاں

عوام کو سنت ابراہیمی کی ادائیگی سے محروم کردیا وہیں کمپنیوں نے اپنے گاہکوں کو گوشت کے نام صرف دھوکا دیدیا۔

کمپنیوں کی جانب سے ناقص اقدامات کے بعض سوشل میڈیا پر صارفین نے شکایتوں کا انبار لگادیا۔

ایک صارف کا کہنا ہے کہ میں نے عید کے دوسرے دن کیلئے آن لائن قربانی کا جانور بک کروایا تھا، اور صبح 11 بجے

سے دوپہر 1 بجے تک گوشت پہنچانے کا وعدہ کیا گیا تھا تاہم ابھی تک کمپنی کی جانب سے کوئی

جواب موصول نہیں ہورہا ہے، یہ محض صرف دھوکا ہے۔

مہک فاطمہ صارف نے لکھا کہ یہ ہے وہ سڑا ہوا، بد رنگ اور بدبودار گوشت جو اے آر وائی نے 28 ہزار روپے لے کر

حصے کے طور پر بھیجا۔ مسلسل شکایات درج کرانے پر بھی شنوائی نہیں ہوئی۔ رات 12 بجے نمائندے نے

فون کر کے کہا کہ شکایت کا فائدہ نہیں۔ جو بگاڑنا ہے بگاڑ لو۔

اکبر علی نامی صارف نے لکھا کہ انہوں نے کورونا وائرس کے باعث آن لائن قربانی کا سہارا لیا، مگر انہیں

پہلے دن کے بجائے عید کے دوسرے دن گوشت ملا، تاہم گوشت صاف ستھرا اور تازہ تھا، کمپنی کو وقت کی پابندی کو یقینی بنانی چاہیئے۔

حنا صفدر نامی صارف نے بھی آن لائن قربانی پر مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے لکھا کہ ایک کمپنی فون رسیو نہیں کررہی

جبکہ ایک کے دفتر کے آگے لمبی قطاریں لگی ہیں۔

aiman iqra

پاکستان میں آن لائن قربانی ملکی معیشت اور ٹیکنالوجی کیلئے ایک مثبت قدم ہے مگر ناقص انتظامیہ اور

اقدامات کے باعث کیا آئندہ سال عوام آن لائن قربانی کو ترجیح دیں گے ؟؟

دوسری جانب حکومت کمپنیوں کے کئے جانے فراڈ اور دھوکہ پر کیا اقدامات کریں گی؟؟ یا ہمیشہ کی طرح خاموش تماشائی بنے رہے گی؟؟

ہمیں اپنے قیمتی رائے سے آگاہ  ضرور کیجئے گا۔

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *