پی آئی اے ایئر بس طیارہ حادثہ: متاثرین کو معاوضے کی ادائیگی شروع

پی آئی اے ایئر بس طیارہ حادثہ: متاثرین کو معاوضے کی ادائیگی شروع

674 views

چند ماہ قبل کراچی میں ہونے والے پی آئی اے ایر بس طیارہ حادثے کے متاثرین کو معاوضے کی ادائیگی کا آغاز آج سے ہوگا جس کے لیے تمام انتظامات بھی مکمل کرلیے گئے ہیں۔

راوا اسپیشل

پی آئی اے کے ترجمان نے راوا نیوز سے خصوصی گفتگوکرتے ہوئے بتایا کہ اب تک پانچ سکسیشن سرٹیفیکٹ مل گئے ہیں جنکو طریقہ کار کے مطابق

ادائیگی کی جارہی ہےباقی کا ہم انتظار کررہے ہیں۔

پی آئی اے ترجمان کے مطابق قانونی دستاویزات مکمل کرنے والے متاثرین اور لواحقین کو معاوضے کی ادائیگی آج سے ہوگی، پہلے مرحلے میں پانچ متاثرین

کو ایک ایک کروڑ روپے معاوضہ ملے گا جبکہ جاں بحق تین مسافروں کے لواحقین کو بھی ایک ایک کروڑ روپے معاوضہ کی ادائیگی ہو گی۔

ترجمان نے بتایا کہ حادثے میں زندہ بچ جانے والے دو مسافروں محمد زبیر اور ظفر مسعود کو فی کس ایک کروڑ روپے کی ادائیگی ہو گی۔ زندہ بچ جانے

والے مسافر محمد زبیر کے علاج کے اخراجات بھی پی آئی اے نے ادا کئے۔

طیارہ گرنے سے زمین پر متاثر 22 خاندانوں کو بھی 2 کروڑ 80 لاکھ روپے معاوضہ ملے گا۔ یہ بھی بتایا گیا ہےکہ یہ معاوضہ 14 گاڑیوں اور گھر کا سامان

جلنے یا ضائع ہونے کی مد میں دیا جا رہا ہے۔پی آئی اے حکام کے مطابق 22خاندانوں کے گھروں کو پہنچنے والے نقصان کی ادائیگی بعد میں کی جائے گی۔

پی آئی اے نے زمین پر متاثرہ 22 خاندانوں کو چھ ماہ کا کرایہ بھی دیا ہے۔ پی آئی اے طیارہ حادثہ میں جاں بحق تمام 97 مسافروں کے لواحقین کو فی کس دس

دس لاکھ روپے پہلے ہی ادا کر چکی ہے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ پی آئی اے طیارہ گرنے سے زمین پر جانبحق ایک خاتون کو دس لاکھ اور تین زخمیوں کو پانچ پانچ لاکھ روپے ادا کر چکی ہے۔

طیارہ حادثے کے متاثرین کو معاوضے کی ادائیگی پی آئی اے اور انشورنس کمپنی کے درمیان معاملات طے پانے کے بعد شروع کی گئی ہے۔

مزید پڑھیے: پاک فضائیہ کا سوگواران سے اظہار یکجہتی کے لیے تعزیتی وڈیو ریلیز

پی آئی اے ایئربس طیارہ حادثہ

رواں سال 29 مئی جہاں کورونا وائرس کے باعث لاہور میں پھنسے کراچی کے شہری اپنے عزیزواقارب اور دوست احباب کیساتھ عید منانے شہرقائد کی

جانب بے تاب دکھائی دیتے ہیں اور اپنی منزل کے تعین کیلئے پی آئی اے پی کے فلائٹ 8303 کا انتخاب کرتے ہیں تو کسے کیا پتہ تھا کہ یہ انکا آخری سفر

ہوگا کسے کیا خبر تھی کہ انکے  عزیز کیساتھ ساتھ موت کا فرشتہ بھی انکا منتظر ہوگا۔

پی آئی اے کا بدنصیب ایئربس اے 320 لاہور سے اڑان بھرتا ہوا جب کراچی کی حدود میں داخل ہوتا ہے اور محض چند سیکنڈ کی دوری میں کراچی ایئرپورٹ

پر گرکر تباہ ہوجاتا ہے، اس بدنصیب طیارے میں اس وقت 8 عملے سمیت 91 مسافر سوار تھے جو کہ اپنی زندگی کی لوٹ گئے ، اس دردناک حادثے میں 97

مسافر اور زمین پر ایک خاتون جاں بحق ہوئی تھی۔

افسوس ناک حادثے کو کئی ماہ گزر گئے مگر اب بھی اس حادثے کی تکلیف دہ یادیں ایسی ہیں جو ہمیشہ تازہ رہینگی جبکہ اس حادثے میں اپنے ہیاروں

سے بچھڑنے کا غم  ان کے لواحقین  کی آنکھوں سے آنسو بن کر ٹپکتا رہیگا ۔

مزید پڑھیے: پی آئی اے طیارہ حادثہ :آخر باڈی 112کو تدفین کے لیے اپنی زمین مل گئی

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *