سخت موسم میں خواتین پولیو ورکرز کا عزم :ہمت اور حوصلے کی نئی مثال

سخت موسم میں خواتین پولیو ورکرز کا عزم :ہمت اور حوصلے کی نئی مثال

22 views

صف اول کے پولیو ورکرز پاکستان کو موذی مرض سے نجات کیلئے پرعزم ہیں، آندھی طوفان ، یخ بستہ ہوائیں حتیٰ کہ خون جمانے والی سردی ملک کے پولیو ورکرز کے حوصلے پست نا کرسکے۔

غانیہ نورین

پاکستانی پولیو ورکرز عزم، حوصلہ ، ثابت قدمی اور ہمت کی زندہ دل مثال ہیں جنھیں قومی مقاصد کے حصول کیلئے نا تو موسم کی سختیاں روک سکتی ہے اور نا ہی منزل میں حائل رکاوٹیں۔میلوں سفرکرنے اور پیدل چلنے والے پولیو ورکرز خون جما دینے والی سردی ، دشوار اور کٹھن راستوں سے گزر کر ملک کو پولیو جیسے موذی مرض سے نجات دینے کے لیے اپنے فرائض باخوبی سے سرانجام دے رہے ہیں۔

انہیں باہمت اور حوصلے سے بھرپور پولیو ورکرز میں آزاد کشمیر سے تعلق رکھنے والی دوخواتین بھی شامل ہیں جو بلند و بالا پہاڑی کے برف سے ڈھکے راستوں سے ہوکر اپنے کام کی جانب رواں دواں ہے۔

سوشل میڈیا پر وائرل ہوتی ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ دو خاتون پولیو ورکرز ویکسین کیریئر تھامے برفیلے راستوں سے ہوکر گرز رہی ہیں۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر پاک پولیو نے درجہ حرارت نقطہ انجماد سے نیچے گرے موسم میں کام کرتے  ورکرز کے عزم اور حوصلے کو سلام پیش کرتے ہوئے لکھا ہے کہ خواتین ورکرز کا عزم اس بات کی عکاسی ہے کہ پاکستان جلد ہی پولیو سے نجات حاصل کرلے گا۔

پاک پولیو نے والدین سے اپیل کی کہ جب فرنٹ لائن پر کام کرنے والے ہیروز آپ کے دروازوں پر پہنچے تو آپ اپنے بچوں کو انسداد پولیو مہم کے دوران ویکسین کے قطرے ضرور پلوائیں۔

خواتین کی ہمت کو جرمن سفیر ، معروف گلوکار فرحان سعید سمیت دیگر مقبول ترین شخصیات نے سوشل میڈیا پر خوب سراہایا ۔

انسداد پولیو مہم میں جہاں خواتین کے فرائض بے مثال ہے وہیں مرد فرنٹ لائن ہیروز بھی تعریف کے قابل ہے، پاک پولیو کی جانب سے خیبرپختونخواہ کے ضلع بٹگرام کی تصاویر بھی شیئر کی گئیں جن میں پولیو ورکز شدید سردی اور برف پوش وادی میں کام کرتے نظر آرہے ہیں۔ 

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *