نومنتخب امریکی صدر جوبائیڈن کے قدم پاکستان کیلئے خوش آئند

نومنتخب امریکی صدر جوبائیڈن کے قدم پاکستان کیلئے خوش آئند

163 views

جوزف آر بائیڈن جونیئر کا وائٹ ہاؤس میں براجمان ہونے کے بعد امریکہ اور پاکستان کے درمیان خارجہ پالیسی استوار ہونے کی اچھی امید ظاہر کی جارہی ہے۔

غانیہ نورین

سال 2017 میں ڈونلڈ ٹرمپ کے اقتدار میں آنے کے بعد امریکہ اور پاکستان کے درمیان تعلقات تناؤ کا شکار ہوچکے تھے، ڈونلڈٹرمپ نے اپنی ناراضگی کا اظہار سماجی رابطے کی ویب سائٹ کا سہارا لیتے ہوئے اپنے ٹوئیٹس پر کرکے کیا اور پاکستان پر دباؤ ڈالنے کی کوششیں کی ۔

سال 2018 کے آغاز میں پاکستانی سیکیورٹی امداد معطل کردی گئی جبکہ امریکہ میں تعینات پاکستانی سفارتکاروں پر بھی پابندی کے نئے قوانین نافذ کردیئے گئے۔

مگر امریکہ اور افغانستان کے درمیان تعلقات استوار کرنے کے لیے پاکستان سفیر بن کر سامنے آیا جو پاک امریکہ تعلقات میں ایک بڑی پیش رفت ثابت ہوئی، تاہم نومنتخب صدر جوبائیڈن کے اقتدار میں آنے کے بعد امریکہ کے پاکستان کے ساتھ تعلقات خوش آئند قرار دیئے جارہے ہیں۔

کیونکہ ماضی میں بطور سینیٹر اور نائب صدر جوبائیڈن پاکستان کے حوالے سے اہم قراردادوں اور تجاویز کا حصہ رہے ہیں۔

جوبائیڈن کا پاکستان کی طرف واضح جھکاؤ

٭ نائیون الیون کے بعد جوبائیڈن نے پاکستان پر سے معاشی پابندیاں اٹھانے کی تجویز کے بل پر حمایت کی تھی۔

٭ سال 2007 ء میں جو بائیڈن نے پاکستان کی فوجی امداد کو القاعدہ اور دیگر دہشت گردوں کو پاکستان میں سرگرم عمل ہونے سے روکنے اور طالبان کو پاکستانی کی سرزمین افغانستان کیخلاف استعمال نہ کرنے دینے اور ملک میں جمہوری اصلاحات نافذ کرنے سے جوڑنے کا مطالبہ کیا گیا۔

٭ جوبائیڈن نے سال 2007 میں پرویز مشرف کی جانب سے ملک میں ایمرجنسی نافذ کرنے کی مخالفت کی تھی جبکہ ملک میں صاف اور شفاف الیکشن کروانے کا مطلبہ کیا تھا۔

٭ جوبائیڈن نے بے نظیر کے قتل کی مذمتی قرارداد پیش کی تھی۔

٭ سال 2008 میں جوبائیڈن نے پاکستان اور افغانستان کے درمیان ری کنسٹرکشن زون قائم کرنے کے بل کی حمایت کی تھی۔

٭ جوبائیڈن تین مرتبہ پاکستان کا دورہ کرچکے ہیں جس میں پہلی بار 2008 کے انتخابات کے دوران بطور سینیٹر اور سربراہ خارجہ امور کمیٹی کے آئے تھے۔

٭ تیسری اور آخری بار جو بائیڈن بطور امریکی نائب صدر جنوری 2011 ء کو پاکستان میں آئے اور ملک کی عسکری اور سیاسی قیادت سے ملاقاتیں کیں۔

٭ سال 2009 میں جو بائیڈن کو پاکستان کے لیے ان کی خدمات پر ملک کے دوسرے بڑے سول ایوارڈ’ہلال پاکستان کے اعزاز سے نوازا۔

ملک کے بڑے تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ جوبائیڈن بھی بارک اوبامہ کی طرح پاکستان سے ڈومور کا مطالبہ جاری رکھیں گے۔

مزید پڑھیں : جوبائیڈن کا وائٹ ہاؤس میں پہلا دن: ٹرمپ کی متنازع پالیسیاں ختم

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *