3 5 808x454

پولیو لگاو ملک بچاو:پانچ روزہ پولیو مہم کا آغاز ۔۔

57 views

پاکستان میں آج سے پانچ روزہ پولیو مہم کا آ غاز ہورہا ہے۔ اس مہم کے دوران پانچ سال تک کے چار کروڑ سے زیادہ بچوں کو ویکسین دی جائے گی۔

صبحین عماد

وزیراعظم کے معاون خصوصی فیصل سلطان کا کہنا ہے کہ فرنٹ لائن ورکرز گھر گھر جاکر مہم کو کامیاب بنائیں گے۔

مہم میں دو لاکھ پچاسی ہزار فرنٹ لائن ورکرز حصہ لے رہے ہیں۔ کورونا احتیاطی تدابیر پر عمل کرتے ہوئے مہم چلائی جائے گی۔

فیصل سلطان کا کہنا تھا کہ کورونا وبا کے باوجود صحت سہولیات کی فراہمی حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ تمام پاکستانی قومی فریضہ سمجھتے ہوئے مہم کی کامیابی میں اپنا کردار ادا کریں۔

کوارڈینیٹر قومی ایمرجنسی ڈاکٹر شہزاد بیگ نے کہا کہ گزشتہ چھ مہینوں میں ہونے والی کامیاب مہمات کے نتائج دیکھ رہے ہیں۔

کامیاب مہمات سے بڑی حد تک کیسزاور وائرس میں کمی آئی ہے۔ فرنٹ لائن ورکرز بہترین کارکردگی سے مہم میں مطلوبہ ہدف حاصل کریں گے۔

انہوں نے اپیل کی کہ والدین بچوں کو معذوری سے بچانے کے لئے ضرور ویکسین دیں۔ بچوں کے بہتر مستقبل کے لئے ویکسین پلانا لازمی ہیں

دوسری جانب ترجمان سندھ حکومت اور مشیر قانون ، ماحولیات و ساحلی ترقی بیرسٹر مرتضی وہاب نے انسداد پولیو مہم میں جمیعت ہسپتال، دہلی کالونی میں بچوں کو پولیو کے قطرے پلاتے ہوئے 2021 کی دوسری پولیو مہم کا افتتاح کیا اس موقع پر ضلع جنوبی کی ٹیم بھی ان کے ہمراہ تھی جنہوں نے 5 سال سے کم عمر کے بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے

مرتضی وہاب کا پولیو مہم  کے حوالے سے کہنا ہے کہ کراچی میں 22 لاکھ بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلائیں جائے گے ان کا کہنا تھا کہ والدین اور عوام اس مہم میں سندھ حکومت کی مدد کریں

سب لوگ اپنا کردار ادا کریں پولیو کے قطرے پلانے بچوں کے بہترین مفاد میں ہیں

ان کا کہنا تھا کہ پولیو خطرناک بیماری ہے جولائی 2020 سے لے کر اب تک سندھ میں پولیو کا کوئی کیس نہیں آیا

اگر اس ہی طرح کوشش جاری رہی تو صوبہ سندھ پولیو فری ہوجائے گا

بیرسٹر مرتضٰی وہاب نے میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حکومت سندھ کی جانب سے انسداد پولیو مہم کی تقریب منعقد کی گئی جس کے تحت 29 مارچ سے 04 اپریل تک پولیو مہم چلائی جا رہی ہے. انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت کا ٹارگٹ ہے کہ 9.4 ملین بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے جائیں گے جس میں کراچی شہر کے 22 لاکھ بچے شامل ہیں۔

 انہوں نے صحافیوں سے اپیل کی کہ میڈیا مثبت طریقے سے پولیو مہم کی تشہیر کرے اور والدین کو قائل کرنے میں سندھ حکومت کی مدد کرے کیونکہ پولیو کے قطرے پلائے جانے کے بعد ذندگی بھر کے لیے پولیو وائرس سے بچوں کو محفوظ کیا جا سکے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اللہ کا شکر ہے کہ پچھلے جولائی سے پولیو کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا اور انشاء اللہ سندھ بھر اور ملک میں پولیو کا مکمل خاتمہ ہو جائے گا ۔ اس کا سہرا شہید محترمہ بینظیر بھٹو کے سر جاتا ہے کیونکہ 1993 میں انہوں نے انسداد پولیو مہم کا آغاز کیا تھا۔

واضح رہے کہ پاکستان سمیت بھارت اور بگلادیش وہ واحد ممالک ہیں جن مین پولیو اب تکپایا جاتا ہے اسی لیے ضروری ہے کہ پولیو مہم کا حصہ بنے اور ملک کو پولیو سے پاک کیا جائے

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *