چلیں پاکستان میں جنت دیکھیں ۔۔

چلیں پاکستان میں جنت دیکھیں ۔۔

115 views

قدرت کی خوبصورتی دیکھنے کیلئے ہزاروں لوگ دنیا کے مختلف ممالک کا سفر کرتے ہیں دنیا کے کئی بڑے اور مشہور شہروں کی خوبصورتی دیکھنے کیلئے اپنی فیملیوں کے ساتھ ان ممالک کا سفر کرتے ہیں

صبحین عماد

قدرت کے ان حسین مناظر سے لطف اندوز ہوتے ہیں تو اگر آپ بھی قدرتی مناظر سے لطف اندوز ہونے کا سوچ رہے ہیں تو پاکستان کے شمالی علاقوں کو رخ کرلیں  ان حسین و جمیل وادیوں  تازہ چشموں ، آسمان کو چھوتے ہوئے پہاڑوں اور تروتازہ پھلوں سے اپنی صبح کا آغاز کریں تو اللہ  کی نعمتوں کا اندازہ ہوتا ہے خدا  نے ہمیں کیسی کیسی نعمتوں سے نوازہ ہے

دنیااسلام آباد کی خوبصورتی پرحیران، اسلام آباد دنیا کادوسراخوبصورت شہر، دنیا کا حسین پارک اسلام آباد

مری

پاکستان کے ہر علاقے اپنے قدرتی حسن کی بناء پر سیاحت کی دنیا میں بہت مقبول ہیں۔ اندون اور بیرون ملک سے لاکھوں سیاح پاکستان کے شمالی علاقہ جات کو دیکھنے آتے ہیں۔ موسم سرما میں محدود راستوں اور موسم کی سختی کی بناء پر سیاح مری کی برف باری دیکھنے پر ہی اکتفا کرتے ہیں۔

مری اور گلیات میں برفباری: سیاح کون سی احتیاطی تدابیر اپنائیں؟ - BBC News اردو

 

زیادہ تر خاندان مری سے کاغان تک کی سیر کو ترجیح دیتے ہیں، اس کی وجہ یہ ہے کہ یہاں رہائش، سیر و تفریح، شاپنگ وغیرہ کی سہولیات بہتر ہیں وہاں موجود مال روڈ شوپنگ کے حصول کے لیے خاصا مقبول ہے ۔ یہ پنڈی سے نزدیک ترین علاقہ ہے، جہاں اکثر لوگ اپنی فیملی سمیت آسانی سے جاتے ہیں۔ ایوبیہ کی چیئر لفٹ اور وہاں کے بندر، بچوں کی پسندیدہ ترین چیزیں ہیں۔ مری کو ملکہ کوہسار کا درجہ دیا جاتا ہے۔

قدم بہ قدم پاکستان - 01

ایوبیہ

مری سے نکلتے ہی ٓگے ایوبیہ واقع ہے جس کی چیئر لفٹ بہت مشہور ہے اونچے پہاڑوں کے درمیاں ہزاروں فٹ بلندی پر چلتی چیئر لفٹ سے بچے بڑے بہت محظوظ ہوتے ہیں۔ اس راستے میں بندروں کی ٹولیاں سیاحوں کا انتظار کرتی ہیں، اور سیاحوں کے دیکھتے ہی لپک پڑتے ہیں تو آپ جب بھی جاءیں تو ان کے لیے وہان موجود دکانوں سے کھانے کا سامان بھی لے لیں ورنہ ان کے جو ہاتھ لگا وہ وہی لے جاءیں گے

ایوبیہ نیشنل پارک…… | Pakistan in Focus

National parks Ayubia, Murree - YouTube

کاغان

وادء کاغان مشہور وادی ہے۔ اس کا راستہ بالا کوٹ سے جاتا ہے۔ پنڈی سے بالاکوٹ جانے کے لیے ایبٹ آباد، مری اور مظفرآباد سے راستے جاتے ہیں۔ ایبٹ آباد کے راستے میں مانسہرہ، عطر شیشہ، بیسیاں چوک اور شوہال وغیرہ آتے ہیں، جب کہ مری کیراستے میں باڑیاں، چھانگلہ گلی، کوزہ گلی، ایوبیہ، نتھیا گلی، ٹھنڈیانی اور گڑھی حبیب اللہ کے مقامات آتے ہیں

کاغان,ناران اور بابوسرٹاپ کی سیر

ناران

کاغان سے آگے ناران کا شہر آتا ہے، جہاں سے جیپوں میں جھیل سیف الملوک جایا جاتا ہے۔ طلسم ہوشرباء کی داستانوں جیسی اس نیلی جھیل سے، شہزادہ سیف الملوک اور پری جمال کی داستان، ہماری لوک داستانوں میں ایک مشہور داستان ہے۔ اس کے پیچھے ایک جھیل’’ آنسو جھیل‘‘ کے نام سے مشہور ہے، جہاں پیدل یا گھوڑے کا راستہ ہے۔ جھیل سیف الملوک کے پیچھے کی جانب پہاڑیوں پر سال بھر برف جمی ہوتی ہے

پاکستان کی پراسرار اور حسین جھیل سیف الملوک/ تصویری رپورٹ- خبریں سیاحت - تسنیم نیوز ایجنسی

جس کا عکس اس کے نیلے پانیوں میں انتہائی دلفریب نظر آتا ہے، اس جھیل کے فوٹو کھینچنا ہر سیاح کی ترجیح ہوتی ہے۔ یہاں کے مشہور پہاڑی گلیشئرز میں، ملکہ پربت، مکڑا اور موسیٰ کا مصلیٰ شامل ہیں، جن کو کوہ پیما ہی سر کر سکتے ہیں۔

نیلم وادی

وادء نیلم آزاد جموں کشمیر میں وادء کاغان کے مشرق میں واقع ہے۔ پہاڑوں میں گھرے ہوئے مظفرآباد کے قریب دریائے نیلم اور دریائے جہلم کے دو رنگوں کے پانی کا خوبصورت ملاپ ایک حسین نظارہ پیش کرتا ہے۔ مظفرآباد کا تین صدیوں پرانا لال قلعہ سیاحوں کو اپنی تاریخ یاد دلاتا ہے۔ اس خوبصورت قلعے کے بنانے والے سلطان مظفر کے نام سے ہی اس شہر کا نام منسوب ہے۔

وادی نیلم میں ہفتہ بھر کا قیام فری | پاکستان ٹرائب اردو

پیر چناسی، چکار جھیل، باغ، گنگا چوٹی، بدھ دور کے آثار قدیمہ، کیل وادی، الپائن کے جنگل، اس وادی کو سیاحوں کے لیے پْر کشش بناتے ہیں۔ رتی گلی، چٹھہ کٹھہ جھیل، ہلمت کے علاقے اپنی خوبصورتی میں لاجواب ہیں، جنہیں دیکھنے کے لیے سیاح جوق در جوق یہاں کھنچے چلے آتے ہیں۔گلگت بلتستان کے علاقے کو شاہراہ ریشم کے مشرقی اور مغربی حصوں میں تقسیم کیا جاسکتا ہے۔ مشرقی حصہ اپنی بلند بالا خوبصورت برفانی چوٹیوں کی دولت سے مالا مال ہے۔

وادی نیلم ، رتی گلی جھیل جانے والے سیاحوں کیلئے خوشخبری

 

غیر ملکی کوہ پیماو?ں کی پسندیدہ ان چوٹیوں میں مشہور زمانہ کے ٹو، بالتورہ، تیری کانگری، ہڈن پیک، گشہ بروم، براڈپیک، کے 6،کے7 ،پیو، ہرموش، دیران، راکا پوشی اور دستگل سر شامل ہیں۔ شاہراہ ریشم کے اس حصے میں خپلو، اسکردو، دیو سائی کا میدان، کچھورا جھیل، شنگریلا جھیل، کنکورڈیا، سنو لیک، عطاآباد جھیل سست اور خنجراب پاس سیاحوں کے لیے دلچسپی کا سارا حسن رکھتے ہیں

سکردو - ویکی‌پدیا، دانشنامهٔ آزاد

قدم قدم پاکستان - 25

پاکستان میں حسن نے قدم قدم پر ہی ڈیرے ڈالے ہوئے ہیں تو اب کبھی زمین پر جنت دیکھنے کا  ارادہ ہو تو پاکستان کی حسین نظاروں کو دیکھنے نکل چلیے گا ۔

سفرنامہ اسکردو: دیومالائی حسن کی سرزمین - Pakistan - Dawn News

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *