مان نہ مان میں تیرا مہمان ،اسرائیل کی حمایت پر بھی بھارت نظرانداز

مان نہ مان میں تیرا مہمان ،اسرائیل کی حمایت پر بھی بھارت نظرانداز

119 views

اسرائیل کی بھرپور حمایت پر بھی بھارت نظرانداز ، اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو کے شکریہ سے انڈیا کا نام غائب ، ٹوئٹر پر حامی انڈین صارفین کی درگت بن گئی۔

غانیہ نورین

مودی سرکار دوسروں کو تو آئینہ دکھاتے ہیں مگر خود نہیں دیکھتے، اسلام مخالف سوچ رکھنے والی عالمی قوتوں کا چہتا ملک بھارت گزشتہ کئی ماہ سے عالمی انسانی حقوق کی تنظیموں عالمی پرنٹ و الیکٹرانک میڈیا اور از خود بھارت میں زیر بحث ہے۔ جہاں اکثر بھارت کو اپنی بیوقوفانہ سوچ اور احمقانہ فیصلوں پر رسوائی کا سامنا کرنا پڑتا ہے مگر مودی سرکار کی مثال کھیسانی بلی کھمبا نوچے جیسی ہے۔

نفرت اور فساد پھیلانے کی پالیسی پر عمل پیرا بھارت اس وقت مکمل طور پر اندھا ہوچکا ہے جبکہ دوسرے ممالک میں جاری فساد اور انسانی حقوق کی پامالی میں بھی اپنی ٹانگ اڑانا اپنا اولین فریضہ سمجھتا،مگر جہاں بات ہو مسلمانوں کی نسل کشی کی تو صہیونی قیادت اور اسلام مخلاف حکمرانوں کی جانب مودی سرکار کا حمایتی ہاتھ سب سے پہلے بڑھتا ہے۔

بھارت اپنی ہٹ دھرمی پر قائم ان ممالک کے جوتے چاٹتے ہوئے نظرآتا ہے جن کا مقصد مسلمانوں کی نسل کشی اور اسلامی ممالک پر اپنا غلبہ طاری کرنا ہے جسکی تازہ ترین مثال فلسطین پر جاری اسرائیلی قیادت اور فوج کی جارحیت ہے۔ جہاں روزانہ کی بنیاد پر فلسطینی بچے ، عورتیں ، نوجوان اور ڈاکٹرز شہید ہورہے ہیں جبکہ بلند وبالا عمارتیں ملبے کے ڈھیر میں تبدیل ہوتے دکھائی دے رہے ہیں۔

جہاں امت مسلمہ سمیت پوری دنیا صہیونی ریاست کی بزدل کارروائی کی مذمت کررہی ہے وہیں نام نہاد سیکولر ملک بھارت کی حکمران جماعت بی جے پی اسرائیلی وزیراعظم بنیامن نیتن یاہو کی پوچا کرتے نظرآرہے ہیں۔

مگر بھارت کو شرمندگی کا سامنا اس وقت ہوا جب نیتن یاہو کے شکریہ کی ٹوئٹ پر سے انڈیا کا نام غائب تھا، اسرائیلی وزیر اعظم بنیامن نیتن یاہو نے اتوار کو ایک ٹویٹ میں اسرائیل کی حمایت کرنے والے 25 ممالک کا شکریہ ادا کیا مگر اس میں بھارت کا نام شامل نہیں تھا۔

نیتن یاہو نے اپنی ٹویٹ میں 25 ممالک کے پرچم لگائے جس میں امریکہ، البانیہ، آسٹریلیا، آسٹریا، برازیل، کینیڈا، کولمبیا، قبرص، جارجیا، جرمنی، ہنگری، اٹلی، سلووینیا اور یوکرین شامل ہیں۔

اُنھوں نے لکھا کہ آپ سب کا شکریہ کہ آپ نے ہمارے حقِ دفاع کی حمایت کی اور اسرائیل کے ساتھ قدم ملا کر کھڑے ہوئے۔

بھارت میں نہ صرف اسرائیل کی حمایت میں ٹویٹس کی جا رہی ہیں ، بلکہ بھارت میں #IStandWithIsrael کا ہیش ٹیگ گذشتہ کئی روز سے مسلسل استعمال کیا جا رہا ہے۔ انڈیا کی حکمران جماعت بی جے پی کے کئی بڑے رہنماؤں نے بھی اس ہیش ٹیگ کے ذریعے اسرائیل کے لیے اپنی حمایت کا اظہار کیا ہے۔

بھارتیہ جنتا پارٹی بہار کے صدر ڈاکٹر سنجے جیسوال نے ٹوئٹر پر لکھا کہ ہر ملک کو اپنا دفاع کرنے کا حق ہے۔ میں اسرائیل کے ساتھ ہوں۔

مگر نیتن یاہو کی ٹوئٹ پر بھارت کا نام غائب دیکھ کر پاکستانی صارفین کو موقع ہاتھ لگ گیا جس کے ساتھ ہی ٹوئٹر پر #ShameOnIndia  کا ہیش ٹیگ ٹاپ ٹرینڈ بن گیا جہاں پاکستان صارفین بھارتی حامیوں کو آڑے ہاتھوں لیکر دلچسپ تبصرے کررہے ہیں۔

 بھارتی سوشل میڈیا صارفین کو اسرائیل کی حمایت کرنا مہنگا پڑ رہا ہے اور اس پر خود اسرائیلی سوشل میڈیا صارف میدان میں آ گئے ہیں اور جواب میں کہا ہے کہ اسرائیل کو گائے کا پیشاب پینے اور گوبر کھانے والوں کی حمایت کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔

اسرائیلی صارفین کی جانب سے یہ بھی کہا گیا ہے کہ بھارتی لوگ اپنی گائے کی پوجا کریں اور ان کی خصیہ برداری نہ کریں۔ اسرائیل کے لوگوں نے بھارتیوں کو ان کی اوقات یاد دلاتے ہوئے یہ بھی کہا کہ ان کے جھنڈے کو بھارت کے جھنڈے کے ساتھ ملا کر ان کی توہین نہ کی جائے۔

دوسری جانب وزارتِ خارجہ نے گذشتہ کئی روز سے اسرائیل اور فلسطینیوں کے درمیان جاری اس تنازعے کے بارے میں کوئی سرکاری بیان جاری نہیں کیا ہے۔

تاہم اقوامِ متحدہ میں انڈیا کے مستقل مندوب ٹی ایس تریمورتی نے 12 مئی کو سلامتی کونسل کے ایک مصالحتی اجلاس میں کہا کہ انڈیا تشدد، بالخصوص غزہ سے ہونے والے راکٹ حملوں کی مذمت کرتا ہے۔

اُنھوں نے مزید کہا کہ تشدد کے خاتمے اور تناؤ میں کمی کی فوری ضرورت ہے۔

بھارت اور اسرائیل کے درمیان دفاعی تعلقات میں گہرائی ممبئی میں دہشتگرد حملوں کے بعد آئی مگر اسرائیل کی جانب سے بھارت کو گلے لگانے میں کہیں نا کہیں ہچکچاہٹ دکھائی دیتی ہیں مگر غزہ کی صورتحال پر بھارت کی اسرائیل کے لیے کھلم کھلا حمایت پاکستان کیلئے ایک الارمنگ صورتحال ہے کہ بھارت پاکستان میں بدامنی، افراتفری اور منافرت پھیلانے کے کیا کیا منصوبے تیار کر رہا ہے۔

Source: Twitter,Media Reports
Content :Ghania Naureen

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *