cc 808x454

جسم میں چپ لگ گئی؟؟ ویکسی نیشن سے ہوگئی سب کو ٹینشن

197 views

کورونا ویکسی نیشن کے بعد بازو میں مقناطیس کے چپکنے سے سب کو ہوگئی ٹینشن ، سوشل میڈیا پر گردش کرتی افواہوں پر کسی کی ہنسی نکلی تو کسی نے اس الجھن کا بھانڈا پھوڑ ڈالا۔

غانیہ نورین

اس وقت پوری دنیا عالمی وباء کی لپیٹ میں ہے جہاں عام زندگیاں شدید متاثر ہے، کاروباری سرگرمیوں پر تالے پڑچکے ہیں، کھیل کے میدان تک ویران ہوچکے ہیں وہیں کورونا وائرس سے متعلق افواہیں اور جھوٹی خبروں کا بھی بازار سرگرم ہوگیا ہے۔

خونی وباء سے متعلق جو افواہ سب کے سردرد کی وجہ بن گئی ہے وہ انسانی جسم میں چپ کا داخل کیا جانا ہے، جس سے ان پر ہر وقت نظر رکھی جاسکے گی۔جس کا قصوروار مائیکرو سوفٹ کے بانی بل گیٹس کو ٹھرایا جارہا ہے، بل گیٹس پر یہ الزام لگایا گیا کہ وہ ایسی چپ کو انسانی جسم میں داخل کرنے کا پلان کر رہے ہیں جس سے بعد میں نظر رکھی جا سکے گی۔ تاہم اس الزام کو بل گیٹس نے انتہائی افسوسناک عمل قرار دیا ہے کیونکہ انھوں نے کورونا کے لیے سب سے زیادہ عطیات دیئے ہیں۔

مزید پڑھیں: کورونا ویکسین سے متعلق آگاہی مہم میں فیس بک بھی آگے

اب جب پوری دنیا میں کورونا سے بچاؤ کی ویکسی نیشن کا عمل جاری ہے تو ایک بار پھر سوشل میڈیا پر سازشی نظریات کا پھیلاؤ تیزی سے پھیل رہا ہے۔

سوشل میڈیا پر سامنے آنے والی ویڈیوز میں بتایا جارہا ہے کہ ویکسین کے ذریعے جسم میں مائیکرو چپ ڈالی جارہی ہے یا اس میں کوئی دھات شامل ہے اور اس کے ثبوت کے لیے لوگ ویکسین لگنے کے مقام پر مقناطیس لگا کر دکھا رہے ہیں جس میں وہ مبینہ طور پر چپک بھی رہا ہے۔

ویڈیوز کے بعد کئی انسان کورونا ویکسین لگانے سے متعلق تشویش میں مبتلا ہوگئے ہیں جبکہ کئی افراد نے کورونا ویکسین لگانےکا ارادہ بھی ترک کردیا تو کئی باشعور افراد نے اسے جھوٹ اور بے بنیاد خبر بتایا ہے۔

مزید پڑھیں: کورونا ویکسین کیوں لگوائی؟؟ بیوی شوہر پر غصے سے آگ بگولہ

کرونا ویکسین کے بارے میں لاتعداد جھوٹے پروپیگنڈا سامنے آچکا ہیں لیکن یہ مقناطیس چپکنے والی تھیوری انتہائی مضحکہ خیز ہے کہ ویکسین کے ذریعے “مائیکرو چپ” ڈالی جارہی تاکہ انسانی ذہنوں کو کنٹرول کر کے اپنے مذموم عزائم کی تکمیل کی جاسکے۔

تاہم راوا نیوز نے ہمیشہ کی طرح سچ کی تلاش کو یقینی بناتے ہوئے اس جھوٹ کو بھی بےنقاب کردیا ہے۔

چپ کا انجیکشن میں پھنسنا

پہلا سوال تو یہاں پیدا ہوتا ہے کہ مائیکرو چپ انجیکشن کی سوئی میں پھنس سکتے ہیں۔ لوہے کو آپ خواہ کتنا ہی باریک پیس لیں وہ پانی میں حل نہیں ہوتا اس لئے لوہے کا برادہ اگر ویکسین میں شامل ہو تو وہ ویکسین کی شیشی کے نیچے بیٹھا صاف نظر آ جائے گا۔

اگر بالفرض ایسا ہو بھی تو اس قدر کم ڈوز کےمحلول میں جو برادہ موجود ہوگا اسکی مقدار اتنی کم ہو گی کہ مقناطیس اس پر کوئی اثر نہیں کرسکتا۔

Viral 'Magnet Test' Videos Are Hoax! COVID-19 Vaccines Do Not Contain Metal Or A Microchip

چپ کی موٹائی سرنج کا مقابلہ کرسکتی ہے؟؟

دوسری بات یہاں قابل غور ہے کہ اگر ایک بہت باریک چپ بھی ہوگی تو وہ کس طرح ویکسین لگاتے وقت سرنج سے گزر ہوسکتی ہے؟ جسکی موٹائی صرف 66۔1ملی میٹر سے لے کر 44۔2 ملی میٹر ہوتی ہے اور ایک مائیکرو چپ یقینا” اس سے زیادہ موٹائی رکھتی ہے۔

 مطلب اگر کوئی چپ ہوئی بھی، تو ویکسین لگاتے وقت وہ سرنج کی سوئی میں یقینا پھنس جائے گی اور جسم تک منتقل ہی نہیں ہوپائے گی۔

جسم پر ابھار کیوں نہیں؟؟

کورونا ویکسین کے بعد انسانی بازو پر کوئی نشان نہیں ہوتا لیکن ویکسین کے نام پر چپ انجیکٹ کی جارہی ہے تو بازو کا وہ حصہ ہلکا سا ابھرا ہوا ہونا چاہئے اور جیسے ہی مقناطیس کو اس بازو کے اس حصے کی طرف لایا جاتا تو بازو کی کھال کو ابھرجانا اور مقناطیس کی طرف کھنچ جانا چاہیئے تھا، لیکن کسی وڈیو میں اس طرح کی کوئی بات سامنے نہیں آتی۔

جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ یہ تمام وڈیوز شعبدہ بازی پر مشتمل ہیں۔

دوسری طرف جہاں جھوٹی ویڈیوز سوشل میڈیا پر وائرل ہورہی ہے وہیں ایک شخص نے ان تمام افواہوں بھانڈا پھوڑ دیا ہے، اس نے دکھایا کہ کس طرح بغل میں مقناطیس دبا لیا جائے تو بازو کے اوپر لوہا چپکنے لگتا ہے، اس مقام کے علاوہ جس میں کہیں اور لوہا نہیں چپکتا۔

البتہ انسانی جسم میں آئرن کی موجودگی اور الیکٹرومیگنٹک فیلڈ فیکٹر نظر انداز نہیں کیا جاسکتااگر کسی کے بازو پر واقعی مقناطیس چپکتا ہے تو اسکو سمپل سرنج لگا کے بھی چیک کرنا چاہیئے، پھر بھی یہی نتیجہ برامد ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں: کیا روس نے کورونا وائرس سے بچاؤ کی ویکسین بنالی ہے؟؟

رہی بات انسانی ذہن کو کنٹرول کرنے کی یا چپ کے ذریعے امیون سسٹم کمزور کرنے کی تو کسی کو اتنی خواری کی ضرورت نہیں ہے، سوشل میڈیا انٹرنیٹ کے ذریعے آپکے دماغ پہلےہی کنٹرول ہورہے ہیں، آپکی ہر ایکٹیویٹی گوگل محفوظ کر رہا ہے اور فیسبک جیسی ایپلیکیشنز آپکا ڈیٹا نہ صرف چوری کرتی بلکہ بیچتی بھی ہیں، کیا بگاڑ لیا آپ نے کسی کا؟

خوراک آپ کی پہلے ہی جینٹکلی موڈیفائیڈ ہوگئی ہے، برائیلر چکن، فاسٹ فوڈ، کاربونیٹڈ ڈرنکس سے آپ بخوشی اپنی صحت کا کباڑہکر رہے ہیں، یقین رکھیں کسی مائیکرو چپ کی ضرورت نہیں ہے کسی کو۔

کرونا لیب جنریٹڈ وائرس ہے یا نہیں ہے۔۔۔۔ یہ وبا آئی یا لائی گئی۔۔۔ اس وبا سے کس نے کیا حاصل کیا اس پر بحث ضرور کریں مگر یہ مقناطیسی مائیکروچپ والی چول پہ یقین کرنے کی کوئی وجہ نہیں ہے۔

Source: Social Media
Content:Ghania Naureen

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *