سندھ بجٹ: سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں20 فیصد اضافہ

سندھ بجٹ: سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں20 فیصد اضافہ

103 views

وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے اپوزیشن اور حکومتی ارکان کی ایک دوسرے کے خلاف شدید نعرے بازی میں آئندہ سال کا بجٹ پیش کردیا۔

ترتیب و تدوین :غانیہ نورین

وزیرِ اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے مالی سال 22-2021ء کا بجٹ پیش کرنا شروع کیا تو اپوزیشن کی جانب سے شور مچایا جانے لگا، اسمبلی ہال میں سیٹیاں بجائی جانے لگیں، نعرے لگائے جانے لگے۔

اپوزیشن کے شور شرابے کے باعث اسمبلی ہال مچھلی بازار کا منظر پیش کرنے لگا اور کان پڑی کوئی آواز نہیں سنائی دے رہی تھی۔

سندھ کا بجٹ پیش کرنے والے وزیرِ اعلیٰ مراد علی شاہ نے شور سے بچنے کے لیے کانوں پر ہیڈ فون لگا لیئے اور شور شرابے کے باوجود بجٹ تقریر جاری رکھی۔

اسپیکر سندھ اسمبلی کی جانب سے اپوزیشن کے اس رویّے پر شدید ناراضی کا اظہار کیا گیا۔

اپنی بجٹ تقریر کے دوران وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ مالی سال 22-2021 کے لئے صوبے کے بجٹ کا حجم 1477 ارب 90 کروڑ روپے سے زائد ہے، سندھ کی آمدن کا تخمینہ 1452 ارب، 16 کروڑ 80 لاکھ روہے ہے، اس طرح بجٹ خسارے کا تخمینہ 25 ارب 73 کروڑ روپے سے زائد ہے، نئے بجٹ میں کوئی نیا ٹیکس تجویز نہیں کررہے۔ ترقیاتی اخراجات میں 41.3 فیصد اضافہ کیا گیا ہے، صوبے کے تحت فلاحی منصوبوں کے لئے 293ارب روپے مختص کئے گئے ہیں۔

وزیراعلیٰ سندھ نے بجٹ تقریر کے دوران بتایا کہ تعلیم کے لیے مجموعی طور پر 240 ارب جب کہ صحت کے لیے 172 ارب روپے مختص کئے گئے ہیں، صوبے میں وبائی امراض کا مقابلہ کرنے کے لئے 24.73 ارب روپے مختص کئے گئے ہیں جس میں ہیلتھ رسک الاؤنس بھی شامل ہے، وزیراعلیٰ سندھ آئندہ مالی سال میں تعلیم کے بجٹ میں 14.2 فیصد اضافہ کیا گیا ہے۔ صوبے میں امن وامان کے لئے 119.97 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔

مراد علی شاہ نے کہا کہ صوبائی سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں 20 فیصد جب کہ پینشن میں 10 فیصد تک اضافہ کیا جارہا ہے، مزدور کی کم از کم اجرت 17500سے بڑھا کر 25 ہزار روپے کردی ہے۔ گریڈ ایک سے 5 تک سندھ کے سرکاری ملازمین کے ملازمین کی تنخواہ 25 ہزار روپے ماہانہ ہوگی۔

وزیراعلیٰ سندھ نے بتایا کہ محکمہ ٹرانسپورٹ اینڈ ماس ٹرانزٹ کیلئےمختص شدہ رقم کو15فیصدبڑھادیاہے، محکمہ ٹرانسپورٹ اینڈماس ٹرانزٹ کی رقم 7.64 ارب کردی گئی ہے، اس بجٹ سے 250ڈیزل ہائبرڈالیکٹرک بسیں خریدی جائیں گی، ٹرانسپورٹ اینڈماس ٹرانزٹ کی اے ڈی پی میں 8.2 ارب رکھےگئےہیں۔

صوبائی بجٹ کے دیگر اہم نکات میں  صوبے میں امن وامان برقراررکھنےکیلئے119.97ارب روپے مختص، محکمہ سوشل ویلفیئر کیلئے 18.61ارب روپے مختص، محکمہ ری ہیبلی ٹیشن کیلئے60.9 فیصداضافےسے1.840ارب رکھنے کا فیصلہ، محکمہ وومن ڈیولپمنٹ کیلئےرقم 571.97ملین روپے مختص، محکمہ ورکس اینڈسروسزکیلئے16.03 ارب مختص کیے گئے ہیں۔

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے بجٹ تقریر میں بتایا کہ بلدیات کابجٹ 31.3 فیصداضافہ کے ساتھ 10.48ارب روپے کردیا گیا ہے، بلدیاتی اداروں کےترقیاتی بجٹ کیلئے 25.500 ارب رکھےگئےہیں جبکہ مقامی کونسلرز کےفنڈزکیلئے82.00ارب روپےرکھےگئےہیں۔

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *