ronal 808x454

کوکا کولا نہیں پانی پیو، رونالڈو نے دیا مداحوں کو صحت بخش مشورہ

321 views

پرتگال کے عالمی شہرت یافتہ فٹ بالر کرسٹیانو رونالڈو نے مقبول سافٹ ڈرنک ’کوکا کولا‘ کی جگہ پانی پینے کا پیغام دے دیا۔

غانیہ نورین

لاکھوں دلوں کی دھڑکن کرسٹیانو رونالڈو فٹبال کی دنیا کا وہ نام ہے جن کے مداح ہر ملک ہر شہر اور ہر گلی میں پائے جاتے ہیں، پرتگال کے جارحانہ فٹبالر کے دیوانے ان کے ہر پرفارمنس کے ساتھ ساتھ ان کے ہرعمل پر بھی نظر رکھتے ہیں یہی وجہ ہے کہ سوشل میڈیا کی دنیا میں انکی ویڈیوز سے لیکر ان کی تصاویر وائرل ہوتی رہتی ہیں ، حال ہی میں رونالڈو کی ایک اور ویڈیو سوشل میڈیا پر مداحوں کی توجہ کا مرکز بنی ہوئی ہے جس میں وہ کوکا کولا کے بجائے پانی پینے کو ترجیح دیتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق 36  سالہ کرسٹیانو رونالڈو ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرنے آئے تو انہوں نے اپنے سامنے پڑیں کوکا کولا کی بوتلیں اٹھا کر سائیڈ پر رکھ دیں اور پانی کی بوتل میڈیا کو دکھا کر بولا کہ ’پانی پیو‘۔

پریس کانفرنس کے دوران کرسٹیانو رونالڈو نے سامنے بیٹھے صحافیوں کو دیکھتے ہوئے پانی کی بوتل تھام کر جوش کا اظہار کیا۔

رونالڈو کی ویڈیو نے سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہوئی تاہم ساتھ ہی کوکا کولا کمپنی کو لاکھوں روپوں کا نقصان اٹھانا پڑا۔

رونالڈو کے اس عمل کے بعد کوکا کولا کے شیئرز غیرمعمولی حد تک گر گئے اور سافٹ ڈرنک کی مارکیٹ ویلیو 242 ارب ڈالر سے 238 ارب ڈالر پر چلی گئی۔

کوکا کولا کمپنی جو یورپی فٹ بال چیمپیئن شپ کو سپانسر کر رہی ہے، نے منگل کو اپنے ایک بیان میں کہا کہ ہر کسی کو اپنے ذائقے اور ضرورت کے مطابق اپنے لیے مشروب کا انتخاب کرنے کا حق حاصل ہے۔

یوروز کے ترجمان کا کہنا ہے کہ کھلاڑیوں کو پریس کانفرنس کے دوران پانی کے ساتھ ساتھ کوکا کولا اور کوکا کولا زیرو بھی پیش کی جاتی ہے۔

سوشل میڈیا پر بھی رونالڈو کا یہ ویڈیو کلپ وائرل ہے اور صارفین کی بڑی تعداد ان کے اس عمل کو ’مثبت پیغام‘ قرار دیتے ہوئے سراہ رہے ہیں۔

Source: Media Reports
Content:Ghania Naureen

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *