پاکستان کا دفاعی بجٹ اور کامیاب دفاعی ڈپلومیسی

پاکستان کا دفاعی بجٹ اور کامیاب دفاعی ڈپلومیسی

248 views

تاریخ پر ںظر ڈالی جائے تو نظر آتا ہے کہ 2251030 مربع میل کے طویل رقبے کے کامیاب ترین حکمران مسلمانوں کے دوسرے خلیفہ حضرت عمر نے جب محکمہ فوج قائم کیا تو اس کا بجٹ پانچ لاکھ درہم رکھا تھا جو اس زمانے کے حساب سے ایک غیرمعمولی رقم تھی۔

فہمیدہ یوسفی

اور اس حقیقت سے کون انکار کرسکتا ہے کہ قوموں کی سلامتی کا دارومدار ان کی عسکری اور حربی طاقت پر منحصر کرتا ہے ۔

اس تمہید کے بعد اس سے پہلے کہ ہم پاکستان کے دفاعی بجٹ پر بات کریں ذرا چلتے ہیں اس بات کی طرف کہ پاکستان کے پڑوس میں موجود جنگی جنون میں مبتلا بھارت کے پچھلے سال کے دفاعی بجٹ میں چھ فیصد اضافہ ہوا اور یہ بجٹ پینتالیس اعشاریہ پینتالیس ارب امریکی ڈالر پر یعنی ،77کھرب 85 ارب روپے پر مشتمل تھا ۔ جس کے بعد بھارت دنیا بھر میں دفاعی اخراجات خرچ کرنے والا تیسرا بڑا ملک بن گیا ہے ۔

اب چلتے ہیں پاکستان کے دفاعی بجٹ کی طرف اس حقیقت سے انکار نہیں کیا جاسکتا کہ پاکستان کے دفاعی اداروں کی ساکھ پر ایک منظم طریقے سے پروپیگنڈا کیا جارہا ہے کبھی غیر متعلقہ وڈیوز کو سوشل میڈیا کی زینت بنایا جاتا ہے تو کبھی کسی شخصیت کی کردارکشی میں تما حدیں پار کی جاتی ہیں تو کبھی ایسے الزامات جن کو سن کر عقل بھی دنگ رہ جاتی ہے اور پاکستان کا دفاعی بجٹ بھی ایک ایسا موضوع ہے اور اس کو ہمیشہ سے ہی تنقید کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔

دفاعی بجٹ کے بارے میں اکثریت کا خیال یہ ہے کہ پاکستان کا دفاعی بجٹ پاکستانی بجٹ کا 70 سے 80 فیصد پر مشتمل ہے۔

مزید پڑھیں: سندھ بجٹ: سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں20 فیصد اضافہ

یہ تو ہوگیا وہ تاثر جو لوگوں کے ذہنوں میں ہے لیکن اس میں کتنا سچ ہے اب نظر ڈالتے ہیں آئندہ مالی سال میں دفاع کے لئے مجموعی بجٹ پر

آئندہ مالی سال میں دفاع کے لئے مجموعی بجٹ کا صرف 16 فیصد مختص کیا گیا ہے، 1373ارب روپے مختص کیے گئے ہیں، گزشتہ سال کے مقابلے میں صرف 6 فیصد اضافہ کیا گیا جو کہ افراط زر کی شرح 9.8 فیصد کے تناسب سے بھی کم ہے۔

دستاویزات کے مطابق پاک آرمی کو 651 ارب 54 کروڑ روپے سے زائد، پاک فضائیہ کو 291 ارب روپے جبکہ پاک بحریہ کو 148 ارب 73 کروڑ روپے ملیں گے۔ دفاعی بجٹ میں سے پاک آرمی کے آپریٹنگ اخراجات 108 ارب روپے، ائیر فورس کے 38 ارب 3 کروڑ جبکہ پاک بحریہ کے 18 ارب 88 کروڑ روپے ہیں۔ دفاعی پیداوار اور سروسز پر 278 ارب 41 کروڑ روپے خرچ ہوں گے۔ دفاعی بجٹ آئندہ مالی سال کے کل بجٹ کا 16 فیصد ہے ۔

South Asian Monitor | Defence budget not increased to provide relief to  masses Pakistan FM

2019 / 20میں ملکی معاشی صورتحال کے پیشِ نظر دِفاعی بجٹ منجمد رہا تھا جبکہ 2020 / 21میں بھی مسلح افواج کی تنخواہوں میں کوئی اضافہ نہیں ہوا۔ روپے کی قدرمیں کمی، افراطِ زر اورکولیشن سپورٹ فنڈ کی بندش کے باوجود دِفاعی اور سیکورٹی ضروریات کو ملکی وسائل سے ہی پورا کیا گیا۔

پاک فوج نے کورونا وَبا کے خلاف دِفاعی بجٹ سے ہی 2 ارب 56 کروڑ روپے اور ٹِڈی دَل کے خلاف مہم میں 29 کروڑ 70 لاکھ روپے خرچ کیے ۔پاک افواج نے ٹیکسوں کی مد میں مالی سال2019-20 میں 190 ارب روپے سے زائد جبکہ انکم ٹیکس، کسٹم سرچارج اور سیلز ٹیکس کی مد میں 25 ارب 80 کروڑ روپے جمع کرائے ۔پاک افواج کے رِفاعی اداروں بھی 164 ارب 23 کروڑ سے زائد ٹیکس اور ڈیوٹیز کی مدمیں ادا کئے۔

دوسری جانب ایک رپورٹ کے مطابق دنیا کی دیگر افواج کے مقابلے میں پاکستان کے ایک فوجی پر سب سے کم رقم خرچ کی جاتی ہے۔ امریکا ہر فوجی پر 392,000 ڈالر، سعودی عرب71,000 ڈالر، بھارت 42,000 ڈالر، ایران 23,000 ڈالر اور پاکستان 12,500 ڈالر خرچ کرتا ہے ۔

یہ بھی پڑھیں: کیا نیا مالی سال کا بجٹ عوام کی توقعات کے مطابق ہے ؟؟

ڈاکٹر فرخ سلیم کے مطابق ۔ 1970 ء کی دہائی میں دفاعی بجٹ کے لیے مختص کردہ رقم جی ڈی پی کا 6.50 فیصد تھی۔ 2001-02 ء کے مالی سال کے دوران (گویا بیس سال پہلے) دفاعی بجٹ کے لیے مختص کردہ رقم جی ڈی پی کا 4.6 فیصد تھی ۔ بجٹ 2020-21 میں دفاع کے لیے مختص کردہ 1,289 ارب روپے جی ڈی پی کا محض 2.86 فیصد ہیں۔ 1960ء کی دہائی میں پاک فوج کا بجٹ کل اخراجات کا 30 فیصد تھا۔ بجٹ 2020-21 ء میں پاک فوج کا بجٹ کم ہو کر کل اخراجات کا 8 فیصد ہوچکا ہے ۔

۔ 1970 ء کی دہائی میں دفاعی بجٹ کے لیے مختص کردہ رقم جی ڈی پی کا 6.50 فیصد تھی۔ 2001-02 ء کے مالی سال کے دوران (گویا بیس سال پہلے) دفاعی بجٹ کے لیے مختص کردہ رقم جی ڈی پی کا 4.6 فیصد تھی ۔ بجٹ 2020-21 میں دفاع کے لیے مختص کردہ 1,289 ارب روپے جی ڈی پی کا محض 2.86 فیصد ہیں۔ 1960ء کی دہائی میں پاک فوج کا بجٹ کل اخراجات کا 30 فیصد تھا۔ بجٹ 2020-21 ء میں پاک فوج کا بجٹ کم ہو کر کل اخراجات کا 8 فیصد ہوچکا ہے ۔

Why Pakistan has troops in Saudi Arabia – and what it means for the Middle  East

جبکہ سال رواں کی گلوبل فائر پاور کی رینکنگ میں پاک فوج کا دسواں نمبر ہے، اس سے قبل پاک فوج کی رینکنگ پندرہ تھی، پاکستان نے ایران ، انڈونیشیا ، اسرائیل اور کینیڈا کو پیچھے چھوڑ دیا۔

رینکنگ کے لیے جاری کردہ تفصیلات کے مطابق پاک فوج مالی وسائل میں دنیا کئی دیگر ممالک سے پیچھے ہونے کے باوجود صلاحیتوں اور کارکردگی میں دنیا کے ٹاپ ٹین ممالک میں شامل ہے۔

فوجی لحاظ سے طاقتو رممالک میں امریکا پہلے، روس دوسرے، چین تیسرے نمبر پر براجمان ہے، رینکنگ میں بھارت بدستور چوتھے، جاپان پانچویں نمبر پر موجود ہے۔

یہ بھی پڑھیں: ملک کی معیشت بحال ہونا شروع،اکنامک سروے جاری،وزیر خزانہ ۔۔ 

دنیا کی پہلی 15فوجی طاقتوں میں پاکستان کے علاوہ کسی کی رینکنگ میں بہتری نہیں ہوئی، گزشتہ سالوں میں صرف پاکستان کی فوجی طاقت میں نمایاں اضافہ ہوا۔

جبکہ اس حقیقت سے بھی انکار نہیں کیا جاسکتا افواجِ پاکستان نے یہ اعزاز اپنی ان تھک محنت، پیشہ وارانہ مہارت، خطرات کا مقابلہ کرنے کی اہلیت، اہداف حاصل کرنے کی صلاحیت، بہترین کارکردگی اور میرٹ کی بنیاد پر حاصل کیا ہے۔

میزائل ٹیکنالوجی ہو یا پھر artificial intelligence پاکستان کا خطے میں کوئی مقابل ہی نہیں

اس کی مثال پائلٹ ابھی نندن ہے جب پاکستان فضائیہ نے بھارتی جہازوں کا رابطہ کنڑول ٹاور سے منقطع کر دیا تھا-اور دو جہاز مار گراۓ تھے۔

قابل تعریف ہے کہ ہر طرف سے دشمنوں میں گھری ، وسائل کی کمی کے باوجود پاکستان کی فوج عالمی سطح پر مسلسل ترقی کر رہی ہے۔

Babur Archives - Latest Breaking News | Top Stories |Sports |Politics  |Weather

دیکھا جائے تو افواج پاکستان نے مسلسل محنت، پیشہ وارانہ مہارت، جوش و جذبے، لگن اور مادر وطن کے دفاع میں دن رات ایک کرتے ہوئے عالمی سطح پر بھی صلاحیتوں کا لوہا منوایا ہے۔

مزید پڑھیں: ترسیلات زر کی شرح گزشتہ سال سے زیادہ ہوگئی، اسٹیٹ بینک

حقیقت ہے یہ کہ طاقتور اور ناقابل تسخیر فوج ہی محفوظ ملک کی ضمانت ہے۔

اور اس بات سے بھی انکار نہیں کیا جاسکتا کہ پاکستان کے ملٹری اداروں کے بارے میں منظم انداز سے منفی پروپیگنڈا کیا جاتا ہے۔

جس میں بدقسمتی سے غیر نہیں اپنے شامل ہیں مثبت تنقید کرنا چاہیئے لیکن ایسی نفرت آمیز پروپگینڈا مہمات سے بھی دور رہنا چاہیے جن کا حقیقت سے کوئی واسطہ نہ ہو اور اور جس کی وجہ سے قومی سلامتی کے اداروں کا مورال کم ہوجائے

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *