افغان نائب صدر کے پاکستان ائیر فورس پر الزامات سختی سے  مسترد

افغان نائب صدر کے پاکستان ائیر فورس پر الزامات سختی سے  مسترد

260 views

افغانستان میں طالبان کی جانب سے پیش قدمی  اور اثرو رسوخ کا سلسلہ بڑھتا جارہا ہے۔تاہم افغان حکومت  اپنی ناکامیوں  کے لیے ذمہ دار پاکستان کو ہی ٹہرارہی ہے۔

افغان نائب صدر امر اللہ صالح نے صالح کا کہنا ہے کہ پاکستان طالبان کی کامیابیوں کو بڑھا چڑھا کر پیش کررہا ہے۔

افغانستان کے مقامی میڈیا کے مطابق انہوں نے پاکستان پر طالبان کی حمایت کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ اسلام آباد جھوٹ بولتا ہے۔

جبکہ سماجی میڈیا کی ویب سائٹ  ٹویٹر پر اپنے ٹویٹ میں انہوں نے پاکستان ائیر فورس پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ پاک فضائیہ نے افغان فوج اور فضائیہ کو باضابطہ انتباہ جاری کیا ہے کہ اسپین بولدک کے علاقے سے طالبان کو بے دخل کرنے کے کسی بھی اقدام کو پاک فضائیہ کا سامنا کرنا پڑے گا۔ پاک فضائیہ اب بعض علاقوں میں طالبان کو قریبی فضائی مدد فراہم کر رہی ہے۔

مزید پڑھیں: افغانستان سے فوجی انخلا:امریکہ ، برطانیہ اور نیٹو کا اہم فیصلہ

جبکہ اپنے دوسرے ٹویٹ میں انہوں نے  کہا کہ اگر کسی کو بھی ان کی جانب اس الزام پر شک ہے  تو وہ ثبوت دینے کے لیے تیار ہیں  تاہم تاحال ان کی جانب سے کسی قسم کا کوئی ثبوت پیش نہیں کیا جاسکا ہے ۔

پاکستان فورسز پر ان کی جانب سے لگائے گئے بے بنیاد الزامات پر سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے غم و غصے کا مظاہرہ کیا جارہا ہر اور  صالح سے ثبوت پیش کرنے کا مطالبہ بھی کیا جارہا ہے۔

دوسری جانب   پاکستان نے افغانستان کے نائب صدر کے الزامات مسترد کر دیئے۔ ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ ہم افغان حکومت کے اپنی سر زمین پر کارروائی کے حق کو تسلیم کرتے ہیں۔

مزید پڑھیں: افغانستان امن مذاکرات :کیا ترکی طالبان کو منانے میں کامیاب ہوگا؟

ترجمان دفترخارجہ نے اپنے بیان میں بتایا کہ افغان حکومت نے سپین بولدک میں طالبان کیخلاف فضائی کارروائی کرنے کے حوالے سے آگاہ کیا، پاکستان نے افغان حکومت کے اپنی سر زمین پر کارروائی کا حق تسلیم کرتے ہوئے مثبت جواب دیا، پاکستان نے اپنے علاقے میں سکیورٹی فورسز اور آبادی کے تحفظ کیلئے ضروری اقدامات اٹھائے۔

FO spokesperson rejects reports of 'Saudi Arabia's role' in Pakistan's FATF assessment - Pakistan - DAWN.COM

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ پاکستان ایئر فورس نے اس حوالے سے افغان ایئر فورس کیساتھ کوئی بات چیت نہیں کی، ایسے بیانات پاکستان کی افغان مسئلے کے حل کیلئے مخلصانہ کوششوں پر منفی اثر ڈالتے ہیں، پاکستان نے حال ہی میں 40 افغان سیکیورٹی اہلکاروں کو افغانستان واپس کیا، یہ سکیورٹی اہلکار فرار ہو کر پاکستان آگئے تھے، پاکستان افغانستان میں قیام امن کیلئے پر عزم ہے، افغانستان میں امن کیلئے اس اہم موقع پر تمام توجہ سیاسی تصفیہ پر مرکوز ہونی چاہیے۔

افغان حکومت کی جانب سے پاکستان پر الزامات عائد کرنا کوئی نئی بات نہیں ہے۔

مزید پڑھیں: بگرام ائیربیس:بھارتی اہلکار بھی خاموشی سے بھاگ نکلے ۔۔

اس سے قبل  بھی مختلف مواقعوں پر افغان صدر  اور ان کی کابینہ پر پاکستان کی طالبان معاونت کے الزامات سامنے آتے رہے ہیں۔

جبکہ پاکستان کی جانب سے ہمیشہ افغان میں امن کی کوششوں کا ساتھ دیا گیا ہے ، امریکا اور طالبان کے درمیان براہ راست مذاکرات اور افغان فریقین کے درمیان بات چیت کے لیے پاکستان نے  سہولت کار کے طور پر اپنا بھرپور کردار ادا کیا ہے۔

Source: Pakistan Foreign Office
Content:Fahmida Yousfi

مصنف کے بارے میں
Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *