چوروں نے مجسمے کو بھی نہ بخشا،گیند کے بعد ہاکی بھی لے اڑے

چوروں نے مجسمے کو بھی نہ بخشا،گیند کے بعد ہاکی بھی لے اڑے

68 views

ملک میں چوری کی واقعات میں تیزی سے اضافہ ہونے لگا، بہاولپور میں نصب عالمی شہرت یافتہ اولمپین سیمع اللہ خان کے مجسمے سے چور گیند کے بعد ہاکی بھی لے اڑے۔

غانیہ نورین

ملک کے بڑے شہروں میں دن دیہاڑے چوری اور ڈکیتی کے واقعات عام ہیں، شہری آئے دن موبائل فونز ،پیسے اور قیمتی اشیاء راہ چلتے ان چوروں کو دے دیتے ہیں مگر گزشتہ روز ایک واقعے نے پورے ملک کو حیرانی اور پریشانی میں اس وقت مبتلا کردیا جب عالمی شہرت یافتہ اولمپین سمیع اللہ خان کے مجسمے سے گیند کے بعد ہاکی چوری ہونے کی خبریں ٹی وی چینلوں پر شہ سرخیاں بن گئیں۔

اطلاعات سامنے آنے پر معلوم ہوا کہ چور اولمپیئن سمیع اللہ خان کے آبائی شہر بہاولپور میں ان کے مجسمے کے ساتھ رکھی جانے والی ہاکی اور گیند اٹھا کر لے گئے ہیں۔

مزید پڑھیں: ترقی میں بہت چوریاں ہوتی ہیں،ندا یاسر کے ساتھ پیش آیا افسوس ناک واقعہ۔۔ 

راوا نیوز کے مطابق اولمپیئن کا مجسمہ ایک ماہ قبل  بہاولپور کے علاقے ماڈل ٹاؤن میں نصب کیا گیا تھا، ضلعی پولیس کے مطابق مجسمے کی گیند دو روز قبل چوری ہوئی جبکہ گزشتہ رات ہاکی کو بھی غائب کردیا گیا تھا۔

مجسمے سے ہاکی اور گیند چرانے کا معاملہ جب سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر آیا تو صارفین نے شدید غصے و غم کا اظہار کیا اور متعلقہ حکام سے ایسے عناصر کے خلاف سخت کارروائی اور اسے دوبارہ اصل حالت میں بحال کرنے کا مطالبہ کیا۔

یہ بھی پڑھیں: قیمتی موبائل چوری کرنے والے چور نے مالک کو موبائل واپس کیوں کیا؟؟

ٹوئٹر صارف وقار احمد نے مجسمے کی فوٹو شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ لاعلمی اپنے عروج پر ہے۔ ’ہاکی کے قومی ہیرو اولمپیئن سمیع اللہ کا مجسمہ بہاولپور میں نصب کیا گیا تھا۔ کسی نے مجسمے سے ہاکی اور گیند چوری کر لی ہے۔ معلوم نہیں کہ بطور قوم ہم کہاں جا رہے ہیں۔‘

ٹوئٹر صارف برکت خٹک نے لکھا کہ یہ مجسمہ ہاکی کے بغیر کتنا بور ہو رہا ہو گا۔ ساتھ ہی ایک اور صارف نے جواب دیا کہ ’موقع ملتے ہی اس کو بھی لے جائیں گے۔‘

ٹوئٹر صارف ڈاکٹر ڈاکٹر جاوید اقبال نے مجسمے کی تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ ’سمیع اللہ کے مجسمے سے ہاکی اور گیند چُرا لی گئی۔ شرم آتی ہے بتاتے ہوئے۔‘

صارفین کی شدید تنقید کے بعد انتظامیہ حرکت میں آگئی اور مجسمے کو اسکی اصلی حالت میں بحال کردیا گیا ہے،

ڈی پی او کے مطابق چوری کا مقدمہ درج کرنے کے بعد مجسمےکو اصل حالت میں بحال کردیاگیا۔ انہوں نے یقین دہانی کرائی کہ واقعے میں ملوث عناصر کو جلد گرفتار کر کے قانون کے کٹھہرے میں لایا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں: چور بھی ڈیجیٹل ہوگئے، کروڑوں مالیت کے بٹ کوائن لے اڑے

اس بارے میں سمیع اللہ خان کا کہناہے کہ مجھے سوشل میڈیا کے ذریعے اس ناروا سلوک کا علم ہوا، جس نے بھی یہ حرکت کی ہے یہ اچھی بات نہیں ہے۔ ہاکی اور گیند لے جانے والے سے میری درخواست ہے کہ وہ مجسمے کے ساتھ ہاکی اور گیند کو واپس رکھ دیں۔

خیال رہے کہ نامور پاکستانی ہاکی کھلاڑی سمیع اللہ 6 ستمبر 1951 کو بہاولپور میں پیدا ہوئے تھے۔ سمیع اللہ نے 1976 کے مانٹریال اولمپکس سے 1982 تک منعقد ہونے والے عالمی ہاکی ٹورنامنٹس کے متعدد مقابلوں میں پاکستان کی نمائندگی کی۔

سمیع اللہ کی رفتار کے باعث انہیں فلائنگ ہارس کا خطاب دیا گیا تھا۔14 اگست 1983 کو حکومت پاکستان نے سمیع اللہ کو صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی سے نوازا تھا۔

Source: Media Reports
Content:Ghania Naureen

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *