covid 808x454

کورونا کی تشویشناک صورتحال:سندھ میں آج سے کاروبار پھر بند

40 views

کورونا کےبڑھتے کیسز کے باعث سندھ حکومت نے ایک بار پھر پابندیاں لگادی ہیں جن کا نفاذ آج سے ہوگا۔

غانیہ نورین

تفصیلات کے مطابق کورونا کی تشویشناک صورتحال کے پیش نظر سندھ میں آج سے دوبارہ اسمارٹ لاک ڈاؤن نافذ کردیا گیا، کورونا ٹاسک فورس کے فیصلوں کے تحت شاپنگ مالز اورمارکیٹیں صبح چھ سے شام چھ بجے تک کھلیں گی جبکہ جمعہ اوراتوارکوکاروبار بند رہے گا۔

پابندیوں کے تحت کریانہ، بیکری اور فارمیسی کھلی رہیں گی ، ریسٹورنٹس میں انڈور اور آؤٹ ڈورسروسز دونوں بند ہوں گی تاہم صرف ٹیک اوے کی اجازت ہوگی جبکہ صوبے بھرمیں آج سے تعلیمی ادارے بھی بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے لیکن امتحانات اپنے شیڈول کے مطابق ہوں گے۔

مزید پڑھیں: ڈیلٹا ویرینٹ طاقتور: سندھ میں ایک بار پھر پابندیاں عائد کردی گئیں

فیصلوں کے مطابق سرکاری اور نجی سیکٹر میں پچاس فیصد اسٹاف حاضر ہوگا جب کہ صوبے بھر میں درگاہیں بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے

دوسری جانب محکمہ اوقاف سندھ نے سندھ میں تمام درگاہیں اور مزارات بند کرنے کا سرکلر جاری کردیا ہے ، سرکلر کورونا ٹاسک فورس کےفیصلوں کی روشنی میں جاری کیا گیا۔

سرکلرمیں کہاگیا ہے کہ درگاہوں،مزارات میں عرس،دیگر پروگرام معطل رہیں گے، مزارات،درگاہوں میں ڈیوٹی دینے والے افراد ایس او پیز پر عمل کریں۔

مزید پڑھیں: کورونا:ایک بار پھر لاک ڈاون،کراچی میں ڈیلٹا ویرینٹ پھیلنے لگا ۔۔

خیال رہے کراچی میں کورونا پھیلنے کی شرح بیس فیصد سے زائد ہوگئی ہے ، آج ملک بھر میں 32 کورونا کے مریضوں کا انتقال ہوا جبکہ 3700 سے زائد کیسز رپورٹ ہوئے۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے جاری اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ روز ملک بھر میں کورونا کی تشخیص کے لیے 49 ہزار 947 ٹیسٹ کیے گئے جن میں سے 3752 افراد میں وائرس کی تصدیق ہوئی، اس طرح کورونا کے مثبت کیسز کی شرح 7.51 فیصد رہی۔

یہ بھی پڑھیں: احتیاط بھارتی ڈیلٹا وائرس آگ سے بھی زیادہ خطرناک ہے

Source:ARY News

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *