doggy 808x454

عزت مآب کمشنر کا کتا گم ، شہر بھر میں ڈھنڈورا مچ گیا

84 views

گوجرانوالہ میں تعینات کمنشر کا پالتو گم ہوگیا، لاپتہ کتے کی تلاش میں انتظامیہ متحرک ہوگئیں۔

غانیہ نورین

حضرات ایک ضروری اعلان سماعت فرمائیں، “عزت مآب کمشنر صاحب کا جرمن شیفرڈ کتا سرکاری رہائش گاہ سے گم ہو گیا ہے، یہ کتا جس کسی کو ملے وہ فوری طور پر کمشنر آفس پہنچا دے۔ اگر ہماری کارروائی کے دوران یہ کتا کسی سے ملا تو ان کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی”۔

اس اعلان کی گونج گزشتہ دن گوجرانوالہ کے مختلف علاقوں میں سنائی گئیں جس کی ذمہ داری میونسپل کارپوریشن پرسپرد کی گئی، شہر بھر میں رکشے لاؤڈ اسپیکر لے کر عزت مآب کشمنر صاحب کا کتا ڈھنڈنے میں مصروف دکھائی دیے۔

جبکہ تلاش کرنے والے کو معقول انعام دینے کا اعلان بھی کیا گیا۔

اعلان کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی جس پر صارفین نے بھی موقع کا فائدہ اٹھاتے ہوئے دلچسپ تبصرے کر ڈالے جبکہ کمشنر صاحب کو بھی آڑے ہاتھوں لے کر تنقید کا نشانہ بنا ڈالا۔

دوسری جانب کمشنر گوجرانولہ کے پرسنل سٹاف آفیسر ندیم بٹ نے بتایا کہ کمشنر صاحب میڈیا پر چلنے والی کمزور تحقیق کی خبروں پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔

انکا کہنا تھا کہ ہمیں افسوس ہے کہ جس طرح سے میڈیا نے یہ خبر چلائی ہے اور بات کا بتنگڑ بنایا ہے۔ کمشنر صاحب بھی انسان ہیں وہ بھی پالتو کتا رکھ سکتے ہیں کمشنر بننے سے ان کا انسان ہونا متاثر نہیں ہو سکتا۔

انہوں نے مزید کہا کہ کالونی میں اعلان اس لیے کروائے گئے تاکہ اگر کسی نے کتا چوری کرتے کسی کو دیکھا ہو یا کسی کے علم میں تو وہ بتا سکے۔
ندیم بٹ کے مطابق ’کتا کمشنر صاحب کی سرکاری رہائش گاہ سے آج صبح لا پتا ہوا۔‘ تاہم انہوں نے اس بات کی تصدیق نہیں کی کہ کتا چوری کیا گیا یا کسی دوسری وجہ سے گم ہوا۔

انہوں نے میڈیا کی خبروں پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ پرائیویٹ رکشے میں سپیکر رکھ کر کالونی میں اعلان کروائے گئے۔ ان خبروں سے کمشنر صاحب دکھی ہوئے ہیں۔

Source: Media Reports
Content:Ghania Naureen

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *