3 808x454

ملک بھر میں کورونا بےقابو ، تعلیمی ادارے بند کرنے سے متعلق بڑا فیصلہ

226 views

شہر  کراچی  میں اومی  کرون  کے  پنجے  گاڑھ  لیے  ہیں۔  کیسز  میں  ہوشربا  اضافے  نے  عوام  میں  تشویش  کی  لہر  دوڑا  دی  ہے۔ بڑھتے  کیسز  کے  پیش  نظر  آج  این  سی  او  س  کا  اجلاس  بھی  متوقع  ہے۔

حرا  خالد

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں وائرس سے 4 ہزار 340 افراد متاثر ہوئے اور 7 انتقال کر گئے  ہیں۔

تفصیلات  کے  مطابق  گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران وائرس کی تشخیص کے لیے 49 ہزار 809 ٹیسٹس کیے گئے جس کے نتیجے میں کورونا کیسز مثبت آنے کی شرح 8.71 ہوگئی  ہے۔

گزشتہ 24 گھنٹوں میں ملک کے مختلف حصوں میں کیسز اور اموات کی صورتحال  کچھ  یہ  رہی۔ پنجاب  میں ایک ہزار 131 کیسز  رپورٹ  ہوئے  اور  2 اموات  ہوئیں۔سندھ  میں 2 ہزار 670 کیسز  اور 3 اموات  ،  خیبرپختونخوا  میں 112 کیسز  اور 2 اموات  ، بلوچستان  میں 6 کیسز  ،  اسلام آباد  میں  ۴۱۳ کیسز  ، گلگت بلتستان  میں 6 کیسز  اور  آزاد کشمیر  میں 8 کیسز  رپورٹ  ہوئے۔

دوسری  جانب  کراچی میں کورونا کی پانچویں لہر کے دوران کیسز کی شرح میں ہوشربا اضافہ ہوگیا ہے اور شہر قائد میں کوروناوائرس کی شرح 39 فیصد سے بڑھ گئی  ہے۔ ایک روز  میں وائرس کی شرح میں 4 فیصداضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

ماہرین صحت نے بتایا کہ روز رپورٹ ہونے والے کیسز میں سے 95 فیصد اومی کرون ہیں۔ ماہرین نے شہریوں کو ویکسینیشن کروانے اور بوسٹر ڈوز لگوانے کی ہدایت کی  ہے۔

وفاقی  دارالحکومت  اسلام آباد میں کورونا کیسز بڑھنے لگے، گرلز ماڈل کالج ایف 6 ٹو اور جی 6 ون کو بند کردیا گیا۔ دونوں کالجز کو کورونا کے 6 کیسز سامنے آنے پر بند کیا گیا۔ محکمہ صحت کی سفارش کے بعد کالجز بند کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا ہے۔

بڑھتے  کیسز  کے  پیش  نظر  محکمہ صحت سندھ نے اسکولوں میں بھی کورونا کے ٹیسٹ کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔تفصیلات کے مطابق محکمہ صحت سندھ کی جانب سے تمام  ڈی ایچ او کو مراسلہ جاری کردیا گیا ہے۔

جاری کردہ مراسلے کے مطابق ہر ضلع کے اسکولوں سے  100 سیمپل اکھٹے کئے جائیں گے، کورونا  سیمپل ڈاؤ اسپتال کی کورونا لیب میں بھجے جائیں گے۔

دوسری  جانب  نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) میں صوبائی وزرائے صحت اور تعلیم کا اجلاس آج ہوا جس میں تمام صوبائی وزرائے تعلیم اور وزرائے صحت شریک ہوئے۔

اجلاس میں تعلیم کے شعبے میں کورونا ایس او پیز کی تجاویز پر غور کیا  گیا  جب کہ وزرائے صحت کے اجلاس میں سماجی و شادی کی تقاریب، ان ڈور آؤٹ ڈور ڈائننگ اور  ٹرانسپورٹ کے شعبے میں  ایس او پیز کی تجاویز بھی زیر غور آئیں۔

 زرائع  کے  مطابق  این سی او سی نے 17 جنوری سے ٹرانسپورٹ اور پروازوں میں کھانے کی فراہمی پر بھی پابندی عائد کردی ہے۔

وزرائے تعلیم کے اجلاس میں اسکولوں کو کھلا یا بند رکھنے کے حوالے سے بھی فیصلہ کیا جانا  تھا  تاہم  اب  یہ  اجلاس  کل  تک  ملتوی  کیا  گیا  ہے  اور  تعلیمی  اداروں  سے  متعلق  فیصلہ  کل  کیا  جائے  گا۔

کورونا  کیسز  میں  اضافے  نے اسکول  جانے  والے  بچوں  کے والدین  کو  بھی  پریشان  کر  دیا  ہے  اور  والدین  انکی  صحت  کے  حوالے  سے  تحفظات  کا  شکار  ہو  رہے  ہیں۔

حکومت  اور  وزارت  صحت  کی  جانب  سے  عوام  سے  یہی  درخواست  کی  جا  رہی  ہے  کہ  عوامی  مقامات  پر  جانے  سے  گریز  کیا  جائے  اور  ماسک  کا  استعمال  کیا  جائے  تاکہ  اس  بیماری  کے  مزید  پھیلاؤ  سے  بچا  جا  سکے  اور  ایک  بار  پھر  لاک  ڈاؤن  کی  زحمت  نہ  اٹھانی  پڑے۔

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *