1 19 808x454

نواز شریف کی میڈیکل رپورٹ نا کافی ہے

29 views

میڈیکل بورڈ نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کی صحت کے حوالے سے دستاویزات کو ناکافی قرار دے دیا۔

صبحین عماد

نواز شریف کے میڈیکل بورڈ نے محکمہ صحت پنجاب کو جواب جمع کرا دیا۔ ذرائع میڈیکل بورڈ کے مطابق پنجاب حکومت کے میڈیکل بورڈ نے نواز شریف کی رپورٹس کا جائزہ مکمل کر لیا ہے اور بورڈ نے نوازشریف کی صحت کے حوالے سے مہیا کیے گئے دستاویزات کو ناکافی قرار دے دیا ہے۔

میڈیکل بورڈ کا کہنا ہے کہ نوازشریف کی صحت سے متعلق دستاویزات محض ایک ڈاکٹر کی تحریر ہے اور ان خطوط کے ساتھ کسی بین الاقوامی ادارے کی میڈیکل رپورٹ نہیں لگی۔

ذرائع میڈیکل بورڈ کے مطابق میڈیکل رپورٹس کے بغیر نواز شریف کی موجودہ صحت پر رائے نہیں دے سکتے۔ نواز شریف کی کارڈیک، تھرابوسائٹوپینیا سمیت دیگر امراض کی رپورٹ نہیں بھیجی گئی۔

یاد رہے کہ حکومت پنجاب کے ترجمان حسان خاور نے کہا تھا کہ وفاقی کابینہ کے فیصلے کی روشنی میں حکومت پنجاب نے نواز شریف کی میڈیکل رپورٹس کے جائزے کیلئے اسپیشل میڈیکل بورڈ تشکیل دیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اسپیشل میڈیکل بورڈ سینئر 9 پروفیسرز پر مشتمل ہے اور یہ بورڈ 5 دن کے اندر اپنی رپورٹ پیش کرے گا۔

یاد رہے کہ اٹارنی جنرل آف پاکستان (اے جی پی) خالد جاوید خان نے قبل ازیں صوبائی حکومت کو خط لکھا تھا جس میں سابق وزیراعظم کی میڈیکل رپورٹس کی جانچ کے لیے میڈیکل بورڈ بنانے کا کہا گیا تھا۔

وفاقی کابینہ نے اے جی پی آفس کو ہدایت کی تھی کہ وہ مسلم لیگ (ن) کے سپریمو کو بیرون ملک سفر کرنے کے قابل بنانے کے لیے لاہور ہائی کورٹ (ایل ایچ سی) کے سامنے دیے گئے “انڈرٹیکنگز کی صریح خلاف ورزی” کے لیے کارروائی شروع کرے۔

“وفاقی کابینہ کے فیصلے کے مطابق، جو 11 جنوری 2022 کو ہونے والے اس کے اجلاس میں لیا گیا، جیسا کہ اٹارنی جنرل آف پاکستان کے دفتر نے بتایا اور 12 جنوری 2022 کو محکمہ داخلہ کے خط کے ذریعے آگاہ کیا گیا، مجاز اتھارٹی کو تشکیل دینے پر خوشی ہے۔ ایک خصوصی میڈیکل بورڈ (SMB) جس میں درج ذیل ‘میڈیکل رپورٹس کے طور پر جمع کرائی گئی دستاویزات کی جانچ پڑتال’ اور ‘میاں محمد نواز شریف کی جسمانی حالت اور ان کی پاکستان واپسی کی اہلیت کے بارے میں ماہر طبی رائے پیش کی جائے گی۔

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *