1 23 808x454

نور مقدم کیس: ملزم ظاہر جعفر دماغی اور جسمانی طور پر فٹ قرار

86 views

اڈیالہ جیل ہسپتال کے ڈاکٹرز نے نور مقدم کیس کا مرکزی ملزم ظاہر جعفر ذہنی و جسمانی طور پر فٹ قرار دے دیا۔

صبحین عماد 

ڈسٹرکٹ سیشن کورٹ میں نورمقدم قتل کیس کی سماعت ہوئی اور مرکزی ملزم ظاہر ذاکر جعفر کو اسٹریچر پر کمرہ عدالت میں پیش کیا گیا۔

دوران سماعت ڈاکٹرز نے ظاہر جعفر سے متعلق رپورٹ ایڈیشل سیشن جج عطا ربانی کی عدالت میں جمع کرائی جس میں ظاہر جعفر کی صحت سے متعلق تفصیلات موجود تھیں۔

یہ پڑھیں: ظاہر جعفر کو کبھی گود تو کبھی کرسی پر عدالت کیوں لایا جاتا ہے؟؟

ڈاکٹروں نے اپنی رائے دی کہ ملزم ظاہر جعفر کا متعدد مرتبہ میڈیکل چیک اپ کیا گیا، ماہر نفسیات نے بھی معائنہ کیا اور ملزم کو مکمل فٹ قرار دیا ہے۔

مزید پڑھیںنور مقدم کیس: ظاہرجعفر کی اسٹریچر پرعدالت پر حاضری، ویڈیو وائرل

یاد رہے کہ ہونے والی سماعت میں ملزم ظاہر جعفر کو اسٹریچر پر لایا گیا تھا جبکہ اس سے پہلے بھی انہیں پولیس اہلکار کرسی پر عدالت لائے تھے اور بظاہر ایسا لگ رہا تھا کہ وہ بہت بیمار ہیں جبکہ ڈاکٹرز نے انھیں بلکل فٹ کہہ دیا ہے۔

 واضح رہے کہ یکم دستمبر کو اسلام آباد کی  ڈسٹرکٹ سیشن کورٹ میں نورمقدم قتل کیس کی سماعت کے دوران ملزم ظاہرجعفرکے وکیل نے ملزم کے ذہنی مریض ہونے کی درخواست دائر کی تھی  اور ظاہرجعفرکے وکیل نے عدالت سے میڈیکل بورڈ تشکیل دے کرچیک اپ کی بھی استدعا کی۔

یہ بھی پڑھیںظاہر جعفر کو عدالت میں نازیبا الفاط کا استعمال کرنے پر عدالت سے نکال دیا

اسلام آباد کی رہائشی نور مقدم کو رواں سال 20 جولائی کو قتل کر دیا گیا تھا۔ نور مقدم کے قتل کی ایف آئی آر اُن کے والد اور سابق سفیر شوکت مقدم کی مدعیت میں درج کروائی گئی تھی جس میں مقتولہ کے دوست ظاہر جعفر کو مرکزی ملزم نامزد کیا گیا تھا۔

source: media reoports
content: sabheen ammad

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *