2 26 808x454

امریکی صدر جو بائیڈن نے روس کو خبردارکردیا

53 views

امریکی صدرجو بائیڈن نے خبردار کیا ہے کہ اگر روس نے یوکرین میں کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال کیا تو اس کا جواب دیا جائے گا۔

صبحین عماد

امریکی صدر نے واضح کیا کہ واشنگٹن یوکرین کی مدد کے لیے اضافی دو ارب ڈالر مختص کرے گا۔ نیٹو روس کے خطرات کا مقابلہ کرنے کے لیے مشرقی یورپ میں اپنی فوجی موجودگی کو مضبوط کرے گا اور عندیہ دیا کہ وہ روس پر بے مثال اقتصادی پابندیاں عائد کرتا رہے گا۔

بائیڈن نے تصدیق کی کہ امریکا نے ایک لاکھ یوکرینی مہاجرین کی امریکا میں پناہ دے گا۔

امریکی صدرنے مزید کہا کہ انہوں نے چینی صدرسے کہا ہے کہ بیجنگ کی طرف سے روس کو کسی بھی قسم کی حمایت کا خمیازہ چین کو بھگتنا پڑے گا۔ انہوں نے خوراک کی قلت کا مقابلہ کرنے کے لیے اتحادیوں کے ساتھ ہم آہنگی پر زور دیتے ہوئے کہا کہ یوکرین میں جنگ اور روس کے خلاف پابندیوں کی وجہ سے یورپی اور دیگر ممالک نقصان اٹھائیں گے۔

بائیڈن نے مزید کہا کہ میں نے چینی صدر کو دھمکی نہیں دی لیکن میں نے ان سے روس کو مدد فراہم کرنے کے نتائج کے بارے میں کھل کر بات کی۔ میں نے انہیں بتایا کہ ان کے ملک کی معیشت کا مستقبل مغرب کے ساتھ ہے روس کے ساتھ نہیں۔

ساتھ کھڑے ہونے کے عزم پر زور دیا۔ بائیڈن نے ٹویٹر پر اپنے آفیشل اکاؤنٹ کے ذریعے ایک ٹویٹ میں کہا کہ اپنے ساتھی گروپ آف سیون سے مل کر مجھے فخر ہے۔ آج سات رہنما، ہم یوکرین کے عوام اور حکومت کے ساتھ کھڑے ہونے کے لیے پرعزم ہیں جو بہادری سے صدر پوتین کی جارحیت کے خلاف مزاحمت کر رہے ہیں۔

یورپی سلامتی کے لیے سب سے سنگین خطرہ

جمعرات کو نارتھ اٹلانٹک ٹریٹی آرگنائزیشن “نیٹو” کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ یوکرین پر روس کا حملہ کئی دہائیوں میں یورپی سلامتی کے لیے سب سے سنگین خطرہ ہے۔ نیٹو نے مشرقی یورپ میں مزید جنگی طیاروں کی تعیناتی کا اعلان کیا اور کہا کہ روس کی جانب سے جنگی طیاروں کی تعداد میں اضافے کا خدشہ ہے۔ اتحاد کی جنگی صلاحیت مشرقی یورپ میں جاری رہے گی۔

نیٹو کے سکریٹری جنرل جینز اسٹولٹنبرگ کی طرف سے پڑھے جانے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ یوکرین میں روس کی کارروائیوں نے یورپ میں امن کو نقصان پہنچایا۔ انہوں نے کہا کہ ہم یوکرین کو کسی بھی کیمیائی حملے سے نمٹنے کے لیے جنگی ساز و سامان اور دیگرآلات فراہم کریں گے۔ ممنوعہ ہتھیاروں کے کسی بھی روسی استعمال کے سنگین نتائج برآمد ہوں گے۔

انہوں نے 4 نئی فوجی بٹالین کی منظوری کا بھی اعلان کیا جس کے بعد نیٹو کے پاس 8 لڑاکا گروپ ہوگئے ہیں۔انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ نیٹو اتحاد کے ممالک نے دفاع پر اخراجات بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے۔

نیٹو کے سیکرٹری جنرل نے زور دیا کہ روسی صدر ولادیمیر پوتین کی غیر ذمہ دارانہ بیان بازی بڑھ رہی ہے اور روس عدم استحکام کا شکار ہے۔

قبل ازیں اسٹولٹن برگ نے کہا تھا کہ نیٹو افواج یوکرین پر نو فلائی زون نافذ نہیں کریں گی۔ انہوں نے روس کو یوکرین میں کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے سنگین نتائج سے خبردار کیا۔

انہوں نے اس بات کا اعادہ کیا کہ نیٹو یوکرین میں فوج نہیں بھیجے گا۔ ہم اس بات کو یقینی بنانے کے لیے کام کر رہے ہیں کہ یوکرین میں تنازعہ پڑوسی ممالک تک نہ پھیلے۔

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *