Haleem Tradition 720x454

محرم الحرام میں حلیم کی خصوصی روایت

62 views

پاکستان میں محرم الحرام میں نویں اور دسویں محرم کو شہری خاص طور پر گھروں میں حلیم تیار کرتے ہیں۔

حلیم کو محرم الحرام کی خاص روایت بھی کہا جائے تو کچھ غلط نہ ہوگا۔ کیونکہ حلیم محرم الحرام کی ایک خاص اور اہم سوغات کے طور پر ہر سال محرم الحرام کی 9 اور 10 تاریخ کو مذہبی عقیدت و احترام کے تحت ملک کے مختلف حصوں میں خصوصی طور پر تیار کیا جاتا ہے۔

گندم ، جو ، دال اور گوشت کے ایک مزیدار مرکب کو حلیم یا دلیم بھی کہا جاتا ہے، یوں  تو پاکستان  میں سال بھر حلیم شوق سے کھائی جاتی ہے لیکن محرم میں بننے والی حلیم کھانے والوں کو انگلیاں چاٹنے پر مجبور کردیتی ہے۔ کٹی ہوئی ہری مرچ، ادرک، تلی ہوئی پیاز اور لیموں حلیم کا ذائقہ دوبالا کردیتے ہیں۔

 محرم الحرام کے دوران پیغمبر اسلام محمدﷺ کے نواسے حضرت حسین رضی اللہ تعالیٰ عنہ کی نذر و نیاز کے لئے حلیم نہایت عقیدت و احترام سے تیار کرنے کا خاص اہتمام کیا جاتاہے۔ کراچی اور غالباً پورے پاکستان میں رات بھر حلیم کی دیگیں پکائی جاتی ہیں۔

نوجوان لڑکوں میں رات بھر حلیم کے لئے جو جوش و خروش اور جو اہتمام ہوتا ہے وہ دیکھنے کے قابل ہوتا ہے۔ محرم کا مہینہ شروع ہوا نہیں کہ حلیم پکانے کے لئے پروگرام ترتیب دے دیئے جاتے ہیں اور پہلے ہی اپنی اپنی سہولت کے حساب سے تاریخوں کا فیصلہ کرلیا جاتا ہے کہ کب کس کہ گھر حلیم بنانے کا اہتمام کیا جائے گا.

لیکن اس سب سے پہلے دیگوں کے حصول کیلئے قریبی ڈیکوریشن سینٹرز پر بکنگ کرالی جاتی ہے کیونکہ پہلے سے بکنگ نہ کرائے جانے پر دیگیں اور دیگر سامان نہ ملنے کا احتمال رہتا ہے۔

حلیم میں عام طور پر کئی قسم کی دالیں یعنی مسور، مونگ، ماش اورچنا ڈالی جاتی ہیں جبکہ گندم اور جو کے ساتھ ساتھ سرخ مرچ، گرم مصالحہ، گوشت، ہلدی، نمک، گھی، لہسن، ادرک اور پیاز ڈالا جاتا ہے

 جبکہ اسے پلیٹ میں سرو کرتے وقت اوپر سے لیموں، ادرک، ہرا دھنیا، پودینہ اور بگھری ہوئی پیاز بھی اس کا اہم جز ہے جسے ڈالے بغیر حلیم کا اصل مزہ لینا ہی نا ممکن ہے۔ حلیم پر چاٹ کا مصالحہ ڈالنا بھی ذائقہ مند سمجھا جاتا ہے۔

حلیم کی تیاری کیلئے عام طور پر محلے کی سطح پر چندہ اکٹھا کیا جاتا ہے یا مخیر حضرات اپنی طرف سے اہتمام کرتے ہیں۔ نو یا دس محرم الحرام کی رات نوجوان اور بچے محلوں کی گلیوں یا میدانوں میں قناتیں لگا کر حلیم پکاتے ہیں۔  نوجوان دیگ میں موجود تمام اشیاء کو مکس کرنے کیلئے رات بھر گھوٹا لگاتے ہیں اور اسے پوری راتکی محنت کے بعد تیار کیا جاتا ہے

اس تبرک کو جتنے اہتمام سے تیار کیا جاتا ہے اتنے ہی اہتمام سے اسے کھلایا اور تقسیم کیا جاتا ہے۔ صبح سویرے اسے محلے کے ہر گھر میں پہنچایا جاتا ہے۔ عام طورپر حلیم ناشتے کے وقت ہی سب گھروں میں پہنچا دیا جاتا ہے۔

کیا آپکے گھر یا محلے میں بھی حلیم کا اہتمام کیا جاتا ہے ؟

مصنف کے بارے میں

راوا ڈیسک

راوا آن لائن نیوز پورٹل ہے جو تازہ ترین خبروں، تبصروں، تجزیوں سمیت پاکستان اور دنیا بھر میں روزانہ ہونے والے واقعات پر مشتمل ہے

Comments

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Your email address will not be published. Required fields are marked *